پاکستانی حکومت پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کے نفاذ کی خواہاں ہے: پاکستانی تجزیہ کار

اسلام آباد، 27 دسمبر، ارنا - سنیئر پاکستانی تجزیہ کار اور سابق سفیر کا کہنا ہے کہ بعض ممالک بشمول امریکہ پاک ایران گیس پائپ لائن کو روکنے کے لئے پاکستان بر دباؤ ڈالے تاہم پاکستانی حکومت اس منصوبہ کو عملی جامعہ پہنانے کے لئے پُرعزم ہے.

ان خیالات کا اظہار ایران میں پاکستان کے سابق سفیر 'جاوید حسین' نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ بعض بیرونی دباو کی وجہ سے پاک ایران گیس پائپ لائن کی راہ میں رکاوٹ آئی مگر پاکستان میں اس امن پائپ لاین منصوبے کے نفاذ کی اشد ضرورت ہے.

انہوں نے کہا کہ اگر پاکستانی حکومت گوادر بندرگارہ سے قومی گیس نیٹ ورک کے مرکز تک 400 کلومیٹر طویل پائپ لائن بچھانے کے منصوبے کو آئندہ تین یا چار سالوں میں بنائے تو ایران کے ساتھ مشترکہ سرحد پر بھی پائپ لائن بچھا کر گوادر پائپ لائن کے ذریعے ایرانی گیس کو پاکستان لانے میں کامیابی ہوگی.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@