ایران کے ہاتھ سے بننے ہوئے قالین کی برآمدات میں 31 فیصد کا اضافہ

قزوین، 26 دسمبر، ارنا - ایران کے قومی قالی مرکز کے نائب صدر برائے مارکیٹنگ امور نے کہا ہے کہ گزشتہ آٹھ ماہ میں 27 کروڑ مالیت کے ہاتھ سے بننے ہوئے ایرانی قالین مختلف ممالک کو برآمد کئے گئے ہیں جس سے ان برآمدات میں 31 فیصد کا اضافہ دیکھا گیا ہے.

یہ بات 'محمد مہدی فرشچی موحد' نے ایرانی صوبے قزوین میں ہاتھ سے تیار کئے جانے والے قالین سے متعلق دسویں نمائش کی افتتاحی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ ایرانی قالین کی برآمدات میں قابل قدر اضافے سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ اس شعبے کی مصنوعات کی برآمدات میں کامیاب اور ان کی مزید توسیع کی طرف بڑھ رہے ہیں.

انہوں نے مزید بتایا کہ 2015 میں ایران سے 29 کروڑ ڈالر قالین برآمد کی گئی اور 2016 میں 33 فیصد اضافے کے ساتھ ایرانی قالین کی برآمدات کی شرح 35.9 کروڑ ڈالر تک پہنچ گئی ہے.

فرشچی نے دنیا کے 29 ممالک ایرانی قالین کے خریدار ہیں جس میں 13 ایشیائی، 11 یورپی، 4 امریکی اور ایک افریقی ممالک میں شامل ہیں.

انہوں نے ایران کی ہاتھ سے بنائے ہوئے قالین کی برآمدات بڑھانے میں جوہری معاہدے کے اہم کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ جوہری معاہدے کے بعد قالین کی برآمدات کی شرح میں قابل قدر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے جو یہ تجارتی تعلقات کی ترقی میں سیاسی روابط کی توسیع کے تعمیری کردار کی نشاندہی ہے.

انہوں نے دنیا بھر میں ایرانی قالین کی شہرت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہم اپنی اس 3 ہزار سالہ صنعت پر فخر کرتے ہیں.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@