ایران کا ریلوے لائن اور مواصلاتی شعبوں میں ترک سرمایہ کاری کا خیرمقدم

اسلام آباد، 26 دسمبر، ارنا - ایرانی اسپیکر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران ترک کمپنیوں کی جانب سے ریلوے، سڑک، ہوٹل اور ایوی ایشن انڈسٹری میں سرمایہ کاری کی بھرپور حمایت کرتا ہے.

یہ بات 'علی لاریجانی' نے گزشتہ روز پاکستان میں منعقدہ 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس کے موقع ترک پارلیمنٹ کے اسپیکر 'اسماعیل قہرمان' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر دونوں ممالک کے وفود میں شریک اعلی حکام او سفیر بھی موجود تھے.

لاریجانی نے ایران اور ترکی کے بڑھتے ہوئے تجارتی اور اقتصادی تعلقات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے مزید کہا کہ انہوں نے اپنے حالیہ دورہ ترکی کے موقع پر ترک وزیراعظم کے ساتھ دوطرفہ سرمایہ کاری پر مذاکرات کئے.

انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران تیل اور گیس کے شعبوں میں ترک تاجروں اور سرمایہ کاروں کے ساتھ تعاون کے فروغ کے لئے آمادہ ہے اس کے علاوہ ریلوے لائن، سڑکوں کی تعمیر، ایوی ایشن انڈسٹری میں بھی ترک سرمایہ کاری کا خیرمقدم کرتے ہیں.

لاریجانی نے القدس کے حوالے سے ترکی کے موثر مؤقف بالخصوص اسلامی ممالک کے غیرمعمولی سربراہی اجلاس بلانے پر صدر اردوان کی کاوشوں کو سراہا.

انہوں نے شام کے حوالے سے ایران، روس اور ترکی کے سہ فریقی تعاون کو ایک کامیاب تجربہ قرار دیتے ہوئے شام امن مذاکرات سے متعلق آستانہ عمل جاری رکھنے پر زور دیا.

اس موقع پر ترک اسپیکر نے اپنے ایرانی ہم منصب کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کے فروغ کے علاوہ مختلف علاقائی اور عالمی تبدیلیوں پر تبادلہ خیال کیا.

اسماعیل قہرمان نے شام میں علیحدگی پسندوں کی سرگرمیوں پر انتباہ کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ہمیں ہوشیار رہنا ہوگا کہ شام میں جاری کشیدگی کی فضا داعش کے بعد دوسرے دہشتگرد گروہوں کی سرگرمیوں کا باعث نہ بنے.

انہوں نے ایران اور ترکی کے درمیان سرحدی تجارت، انسداد اسمگلنگ اور منشیات کے شعبوں میں موثر تعاون پر اطمینان کا اظہار کیا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@