ایرانی اسپیکر کا افغانستان کیساتھ کثیرالجہتی تعلقات کی توسیع پر زور

اسلام آباد، 26 دسمبر، ارنا - ایران کی اسلامی مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے اسپیکر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، افغانستان کے ساتھ تمام شعبوں بشمول سیاسی، اقتصادی، ثقافتی اور سیکورٹی شعبوں میں باہمی تعاون کو بڑھانے کے لئے آمادہ ہے.

یہ بات 'علی لاریجانی' نے گزشتہ روز اسلام آباد میں منعقدہ 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس کے موقع پر افغان پارلیمنٹ کے اسپیکر 'عبدالرئوف ابراہیمی' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

علی لاریجانی نے 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس میں افغان وفد کی شرکت کو اہم قرار دیتے ہوئے انسداد دہشتگردی کے حوالے سے افغانستان کے مؤقف اور نقطہ نظر کا خیرمقدم کیا.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ علاقائی مشکلات کے خاتمے کے لئے خطی ممالک کے درمیان تعاون کو مزید موثر بنانے کی ضرورت ہے، اس حوالے سے اچھے تجربات موجود ہیں جن سے استفادہ کرنا چاہئے.

اس ملاقات میں افغان اسپیکر نے خطے میں اسلامی جمہوریہ ایران کے اہم کردار کا ذکر کرتے ہوئے ایران سے مطالبہ کیا کہ وہ افغانستان کے ساتھ باہمی تعاون کی توسیع کے لئے موثر فضا فراہم کرے.

عبدالرئوف ابراہیمی نے اس امید کا اظہار کیا کہ علاقائی تعاون کے ذریعے دہشتگردی کا خاتمہ کرکے ماضی کے مقابلے میں ہمسایہ ممالک کے درمیان تعاون کے لئے وسیع مواقع فراہم ہوں.

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں پاکستانی پارلیمنٹ کی میزبانی میں 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں ایران سمیت پاکستان، چین، ترکی، روس اور افغان اسپیکروں نے شرکت کی.

اس کانفرنس میں اسپیکروں اور ان کے ہمراہ اعلی سطح وفود نے خطے میں دہشتگردی کے خلاف مشترکہ لائحہ عمل، پارلیمنٹ کے کردار اور علاقائی تعاون کے ذریعے اجتماعی ترقی کے حصول کے موضوعات پر اپنے خیالات کا اظہار کیا.

ایرانی اسپیکر علی لاریجانی کی جانب سے بھی اعلان کیا گیا کہ 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس کا اگلا دور کا انعقاد تہران میں ہوگا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@