کم سے کم دفاعی صلاحیت کا حصول، ایران میں مضبوط امن کا راز ہے: جنرل باقری

تہران، 25 دسمبر، ارنا - ایرانی مسلح افواج کے سپہ سالار نے کہا ہے کہ اگر آج وطن عزیز میں امن و سلامتی کی صورتحال مضبوط ہے تو اس کی وجہ یہ ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے کم سے کم دفاعی صلاحیت کو برقرار رکھنے کی قابلیت حاصل کرلی ہے.

ان خیالات کا اظہار میجر جنرل 'محمد حسین باقری' نے ہفتہ تحقیق کی مناسبت سے جامعہ امام حسین (ع) کی خصوصی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ اسٹریٹیجک ڈیٹرنس، حق اور باطل کی دو فرنٹوں کے شامل ہیں جو باطل فرنٹ، ہمیشہ اس ڈیٹرنس کو درہم برہم کرنے کی کوشش کر رہی ہے.

ایرانی مسلح افواج کے سپہ سالار نے کہا کہ ہمارے ملک، تیسری دنیا کے ایک ملک کے طور پر ہمیشہ یا استثمار کے زیراثر یا بظاہر آزادانہ کام کر رہا تھا لیکن شاندار اسلامی انقلاب، سماجی مطالبات پر مبنی نہیں بلکہ اہل تشیع کی ایک سو سال کوششوں کے نتیجے کے تحت قائم ہو گیا ہے.

انہوں نے کہا کہ اسلامی انقلاب نے ملک کو سامراج کے چنگل سے نکل کر دیا اور وہ دنیا میں ایک نئی تحریک کے علمبردار بن گیا.

جنرل باقری نے اسلامی انقلاب کے بعد دشمن نے پسماندگی کا احساس کردیا اور 8 سالہ تحمیلی جنگ کے دوران ایرانی قوم کے خلاف سازشیں کرنے میں خاموش نہیں بیٹھا.

انہوں نے مزید کہا کہ آج حق اور باطل ایک دوسرے کے ساتھ مقابلہ کر رہی ہیں تو ہمیں اس راستے میں شکست کی روک تھام کے لیے اس پر توجہ کرنی چاہیے.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@