یمن کو میزائل نہیں دئے، امریکہ خطے میں مہم جوئی کررہا ہے: ایرانی اسپیکر

اسلام آباد، 24 دسمبر، ارنا - ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ امریکہ ہمیشہ خطے میں مہم جوئی چاہتا ہے جبکہ ان کا حالیہ الزام کہ ایران نے یمن کو میزائل فرائم کئے ہیں، سراسر من گھڑت ہے.

ان خیالات کا اظہار 'علی لاریجانی' نے اتوار کے روز پاکستانی دارالحکومت اسلام آباد میں منعقدہ 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس کے موقع پر روسی پارلیمنٹ ڈوما کے اسپیکر 'ویاچسلاو والودین' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا.

اس موقع پر انہوں نے تہران ماسکو تعلقات کی توسیع بالخصوص تجارتی اور اقتصادی شعبوں میں مشترکہ تعاون کو بڑھانے پر زور دیا.

ایران اور روس کے درمیان ریلوے اینجن کی مشترکی پیداوار کے معاہدے کے نفاذ پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے علی لاریجانی نے اس شعبے میں دوطرفہ تعاون کو مزید توسیع دینے کا مطالبہ کیا.

علی لاریجانی نے شام میں دہشتگردوں کے خلاف ایران اور روس کے مشترکہ تعاون پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے مزید کہا کہ بعض فریقین شام میں ہونے والی فتوحات کو اپنے مخصوص مقاصد کے لئے استعال کرنا چاہتے ہیں جس پر ہمیں ہوشیار رہنا ہوگا.

انہوں نے شامی علاقے رقہ میں امریکی فورسز کی موجودگی کو شامی سیکورٹی فورس کی دہشتگردوں پر کامیابی کے حوالے ایک منفی اقدام اور رکاوٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس مسئلے کا دوطرفہ طور پر جائزہ لینا ہوگا.

علی لاریجانی نے القدس کے حوالے سے ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے کے خلاف روسی مؤقف کا شکریہ ادا کیا.

ایرانی اسپیکر نے یمن کی انصاراللہ تنظیم کو میزائل فراہم کئے جانے کے حوالے سے ایران کے خلاف امریکی الزامات کو مسترد کرتے ہوئے مزید کہا کہ یہ امریکہ کی نئی چال ہے، روس ہمارا قریبی دوست ہے اور اسے اچھی طرح پتہ ہے کہ ہم نے یمنیوں کو میزائل نہیں دئے.

علی لاریجانی نے مزید کہا کہ امریکہ چند لوہے کے ٹکڑے دیکھا کر خطے میں نئی مہم جوئی کا آغاز کرنے کا خواہاں ہے.

اس موقع پر روسی پارلیمنٹ ڈوما کے اسپیکر نے امریکہ کی دوہری پالیسی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ امریکی حکام حقائق سے خوفزدہ ہیں.

انہوں نے پاکستان میں منعقدہ اسپیکرز کانفرنس کو کامیاب نشست قرار دیتے ہوئے علاقائی ملکوں کے درمیان ہم آہنگی اور باہمی مشاورت کی توسیع پر زور دیا.

'ویاچسلاو والودین' نے کہا کہ روس، ایران کے ساتھ اقتصادی تعاون کو مزید بڑھانے کا خواہاں ہے اور اس مقصد سے اگلے سال ایک اعلی سطحی روسی تجارتی وفد ایران کا دورہ کرے گا.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان کی قومی اسمبلی کی میزبانی میں انسداد دہشتگردی اور علاقائی تعاون پر پہلی بار 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس منعقد ہورہی ہے جس میں اسلامی جمہوریہ ایران کے اعلی سطحی پارلمانی وفد بھی شریک ہے.

نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے امور قونصلر 'حسن قشقاوی'، ایرانی اسپیکر کے معاون خصوصی برائے بین الاقوامی امور 'حسین امیرعبداللہیان' اور سنیئر پارلیمانی اراکین علی لاریجانی کے وفد میں شامل ہیں.

ترکی، روسی، چینی اور افغانستان کے اسپیکرز بھی اس کانفرنس میں شریک ہیں.

اسپیکرز کانفرنس کا مقصد دہشتگردی کے چینجلز اور علاقائی تعاون پر تبادلہ خیال کرنا ہے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@