پاک ایران تعاون کی توسیع کیلئے نئے مواقع فراہم ہوچکے ہیں: ایرانی اسپیکر

اسلام آباد، 24 دسمبر، ارنا - ایران کی اسلامی مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے اسپیکر نے پاک ایران تعلقات بڑھانے کے لیے عملی اقدامات اٹھانے پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان تمام شعبوں باہمی تعاون کی توسیع کے لئے نئے مواقع فراہم ہوچکے ہیں.

یہ بات 'علی لاریجانی'نے پاکستانی دارالحکومت اسلام آباد میں ایرانی سفارتخانے کے اہلکاروں اور ایرانی اداروں کے عہدیداروں کے ساتھ ایک خصوصی نشست میں خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مختلف ادوار میں ایران اور پاکستان کے درمیان کچھ مسائل کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان مسائل کے باوجود دونوں ممالک کے درمیان دوستانہ اور قریبی تعلقات قائم ہیں.

لاریحانی نے دونوں ممالک کے درمیان تاریخی اور ثقافتی اشتراکات کو باہمی تعلقات بڑھانے کا باعث قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ مواقع سے فائدہ اٹھانا چاہیے.

ایرانی اسپیکر نے کہا کہ ایران اور پاکستان کے حکام کے درمیان حالیہ تعلقات سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ دونوں ممالک باہمی تعلقات کو فروغ دینے پر دلچسبی رکھتے ہیں.

انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات کے لیے مختلف مواقع فراہم ہونے کا ذکر کرتے ہوئے پاکستان سے مطالبہ کیا کہ کثیر الجہتی تعلقات سمیت تجارتی اور اقتصادی شعبوں میں باہمی تعاون کو فروغ دینے کی مزید کوشش کریں.

ایرانی مجلس کے اسپیکر نے پاک، ایران امن گیس پائپ لائن کے نفاذ کو باہمی اقتصادی تعلقات کی توسیع کے لیے اہم موقع قرار دیا.

اسلام آباد میں تعینات ایرانی سفیر 'مہدی هنردوست' نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان موجودہ باہمی تعاون، کثیرالجہتی تعلقات کی توسیع میں ایک نیا باب ہے.

انہوں نے کہا کہ ایرانی صدر 'حسن روحانی' کے گزشتہ سال کے دورہ پاکستان اور پاکستانی آرمی چیف جنرل 'قمر جاوید باجوہ' کے حالیہ دورہ تہران باہمی تعلقات کو مزید بڑھانے کے لئے مددگار ثابت ہوگیا ہے.

یاد رہے کہ ایرانی اسپیکر ایک اعلی سطحی پارلیمانی وفد کے ہمراہ انسداد دہشتگردی اور علاقائی تعاون کے حوالے سے 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس میں شرکت کے لئے گزشتہ روز اسلام آباد پہنچ گئے.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@