اسپیکرز کانفرنس میں انسداد دہشتگردی کے جدید طریقہ کار پر گفتگو ہوگی: لاریجانی

اسلام آباد، 24 دسمبر، ارنا - ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ ان کے دورہ پاکستان کا مقصد 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس میں انسداد دہشتگردی اور علاقائی تعاون کے حوالے سے جدید طریقہ کار پر تبادلہ خیال کرنا ہے.

یہ بات 'علی لاریجانی' نے ہفتہ کے روز انسداد دہشتگردی اور علاقائی تعاون پر اسپیکرز کانفرنس میں شرکت کے لئے پاکستان دارالحکومت اسلام آباد پہنچنے پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ماضی میں انسداد دہشتگردی کی مہم زیادہ کامیاب نہیں رہی جس کی وجہ سے آج علاقائی ممالک اس لعنت سے نمٹنے کے لئے جدید طریقہ کار کی تلاش کے لئے آگے بڑھ رہے ہیں.

لاریجانی نے کہا کہ منعقد ہونے والی علاقائی اسپیکرز کانفرنس میں ایران کے علاوہ پاکستان، چین، افغانستان، روس اور ترکی کے اسپیکرز بھی شریک ہوں گے کیونکہ یہ ممالک دہشتگردی سے مقابلہ کرنے کا خیرمقدم کرتے ہیں.

انہوں نے پاکستان کے دورے کے مقاصد کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اس کانفرنس میں دہشتگردوں سے نمٹنے کے لئے پائیدار اور موثر طریقہ کار پر تبادلہ خیال کیا جائے گا جس میں علاقائی ممالک مرکزی کردار ادا کریں گے.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان کی قومی اسمبلی کی میزبانی میں انسداد دہشتگردی اور علاقائی تعاون پر پہلی بار اسپیکرز کانفرنس کا انعقاد کیا جارہا ہے جس میں اسلامی جمہوریہ ایران کے اعلی سطحی پارلمانی وفد بھی شریک ہے.

پاکستانی پارلیمنٹ کے اسپیکر 'سردار ایاز صادق' اس کانفرنس کی میزبانی کر رہے ہیں.

یہ کانفرنس آج 24 دسمبر بروز اتوار وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ہے.

خیال رہے ہے کہ ایرانی اسپیکر اپنے پاکستانی ہم منصب سردار ایاز صادق سے دوطرفہ روابط، مختلف علاقائی اور بین الاقوامی تازہ ترین صورتحال کے حوالے سے اہم ملاقات کریں گے.

اپنے قیام کے دوران سنیئر پاکستانی حکام سے بھی ملاقاتیں کریں گے.

نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے امور قونصلر 'حسن قشقاوی'، ایرانی اسپیکر کے معاون خصوصی برائے بین الاقوامی امور 'حسین امیرعبداللہیان' اور سنیئر پارلیمانی اراکین علی لاریجانی کے وفد میں شامل ہیں.

ترکی، روسی، چینی اور افغانستان کے اسپیکرز بھی اس کانفرنس میں شریک ہیں.

اسپیکرز کانفرنس کا مقصد دہشتگردی کے چینجلز اور علاقائی تعاون پر تبادلہ خیال کرنا ہے.

9393*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@