ایران آذربائیجان مشترکہ کمیشن کا اجلاس جنوری میں منعقد ہوگا

باکو، 23 دسمبر، ارنا - ایرانی صدر کے چیف آف سٹاف نے ایران اور جمہوریہ آذربائیجان کی تجارتی سرگرمیوں میں ہونے والے 40 فیصد اضافے کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے مشترکہ کمیشن کا اجلاس جنوری میں تہران میں منعقد ہوگا.

ان خیالات کا اظہار 'محمود واعظی' نے آذربائیجان کے دو روزہ دورے کے اختتام پر باکو میں ارنا کے نمائندے کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ دورہ آذربائیجان کے موقع پر بین الاقوامی اسلامی یکجہتی کانفرنس میں شرکت کے علاوہ خصوصی ملاقاتیں ہوئیں اور اس دوران ایران اور آذربائیان کے دوطرفہ تعلقات پر تفصیلی بات چیت ہوئی.

انہوں نے مزید کہا کہ آذری صدر نے اپنے ایرانی ہم منصب کو آذربائیجان کا دورہ کرنے کی دعوت بھی دی ہے لہذا ہمیں امید ہے کہ نئے ایرانی سال تک صدر روحانی باکو کا دورہ کریں گے.

واعظی نے کہا کہ آذربائیان کے صدر مملکت علاوہ قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری، وزرائے خزانہ، ٹرانسپورٹیشن اور کمیونیکیشن کے ساتھ اہم ملاقاتیں ہوئیں جس میں مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا.

صدارتی چیف آف سٹاف نے مزید کہا کہ ایرانی صدر کے آئندہ دورہ آذربائیجان کے دوران باہمی تعلقات کی توسیع کے روڈ میپ کی تیاری کے ساتھ تیل شعبے میں تعاون کے معاہدے پر دستخط کئے جائیں گے.

انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ صدر روحانی کے دورے سے پہلے ایرانی شہر رشت اور آذری علاقے آستارا کے درمیان ریلوے لائن اور مشترکہ آٹوموٹو فیکٹری کا بھی افتتاح کیا جائے گا.

محمود واعظی نے کہا کہ آذری حکام کے ساتھ ایران، آذربائیجان اور ترکی کے سہ فریقی اقتصادی تعاون کی توسیع سمیت زراعت، بینکاری کے شعبوں میں تعلقات بڑھانے بالخصوص لوکل کرنسی کے استعمال پر زور دیا گیا.

انہوں نے مزید کہا کہ آذربائیجان کی قومی سلامتی کونسل کے سربراہ کے ساتھ بھی خطے کی تازہ ترین صورتحال بشمول مسئلہ فلسطین، شام، عراق اور یمن کی صورتحال اور خطے میں داعش اور انتہاپسندوں کی کاروائیوں پر تبادلہ خیال کیا گیا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@