امن مذاکرات پر شامی کانگریس کا پہلا اجلاس جنوری میں روس میں منعقد ہوگا

باکو، 22 دسمبر، ارنا - آستانہ عمل سے متعلق شام امن مذاکرات کے ضامن ممالک ایران، روس اور ترکی نے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ جنوری میں روس کے شہر 'سوچی' میں شامی امن مذاکرات کانگریس کی پہلی نشست کا انعقاد کیا جائے گا.

تفصیلات کے مطابق، قازقستان کے دارالحکومت 'آستانہ' میں منعقدہ شام امن مذاکرات کے آٹھویں دور کے موقع پر تینوں ممالک کے مذاکرات کاروں نے 20 اور 30 جنوری 2018 کو روس میں شام امن مذاکرات کانگریس کے پہلے اجلاس کے انعقاد پر اتفاق کیا.

آستانہ میں منعقدہ امن عمل کے آٹھویں دور کے دو روزہ اجلاس کے اختتام پر مشترکہ اعلامیہ جاری کردیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ امن مذاکرات کانگریس میں تمام شامی فریقین کی شمولیت کا خیرمقدم کیا جائے گا.

تینوں ضامن ممالک کے مذاکرات کاروں نے شامی حکومت اور باغی گروہوں پر زور دیا کہ اختلافات اور فرقہ واریت سے بالاتر ہو کر تعاون کی فضا قائم کریں بالخصوص شام کی سالمیت اور جغرافیائی سالمیت کا احترام کیا جائے.

مشترکہ اعلامیہ میں مزید کہا گیا کہ شام امن مذاکرات کانگریس کے رسمی اجلاس سے پہلے 19 اور 20 جنوری کو ذیلی نشستوں کا انعقاد سوچی میں کیا جائے گا.

کل اور آج ونے والی نشستوں میں روسی صدر کے خصوصی ایلچی الیگزینڈر لافرینتف، نائب ترک وزیر خارجہ سیدات اونل اور ان کے ایرانی ہم منصب حسین جابری انصاری شریک تھے.

خیال رہے کہ آستانہ امن عمل کے ساتواں دور گزشتہ اکتوبر میں منعقد ہوا تھا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@