آستانہ مذاکرات کا آٹھواں دور، ایران روس کا شامی صورتحال پر تبادلہ خیال

باکو، 21 دسمبر، ارنا - نائب ایرانی وزیر خارجہ اور روسی صدر کے ایلچی برائے امور شام کے درمیان شام امن مذاکرات سے متعلق آستانہ عمل کے آٹھویں دور کے موقع پر ملاقات ہوئی جس میں انہوں نے باہمی تعلقات، علاقائی مسائل بالخصوص شام کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

تفصیلات کے مطابق، قازقستان کے دارالحکومت آستانہ میں 'حسین جابری انصاری' اور ان کے روسی ہم منصب 'الیگزینڈر لاورنتیف' نے ایک ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور سمیت شام کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

اس ملاقات میں فریقین نے شامی بحران کے حل کے لئے شامی قومی کانگریس کے انعقاد اور انسانی امداد کی ترسیل پر زور دیا.

نائب ایرانی وزیر خارجہ نے آستانہ میں شام امن مذاکرات کے 8ویں دور میں ایران کی نمائندگی کی جبکہ مذاکرات کل بروز ہفتہ تک جاری رہیں گے.

ان مذکرات میں ایران، ترکی اور روس سمیت شامی حزب اختلاف گروہوں اور مبصرین کے طور پر امریکہ، اقوام متحدہ اور اردن کے وفود شرکت کر رہے ہیں.

آستانہ میں شام کے حوالے سے مذاکرات کا آٹھوان دور شروع ہونے سے ایک روز قبل ایران، روس اور ترکی کے نمائندوں کے درمیان مشاورت ہو رہی ہے.

تینوں ممالک کے نمائندے شام کے شہر اِدلب اور اس کے نواح میں امن زون کی حدود کے تعین کو زیر بحث لائیں گے.

دوسری جانب آج ہونے والی مشاورت میں روسی صدر کے خصوصی ایلچی الیگزینڈر لافرینتف، نائب ترک وزیر خارجہ سیدات اونل اور ان کے ایرانی ہم منصب حسین جابری انصاری شریک ہیں.

271*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@