اقوام متحدہ میں انتہاپسندی کیخلاف ایرانی قرارداد متفقہ طور پر منظور

تہران، 21 دسمبر، ارنا - اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں تشدد اور انتہاپسندی سے پاک دنیا سے متعلق اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے پیش کی جانے والی قرارداد کو تیسری مرتبہ متفقی طور پر منظور کرلی گئی.

جنرل اسمبلی میں قرارداد ایران کے مستقل مندوب نے پیش کی، جس میں تمام ممالک سے تشدد اور انتہاپسندی کے مکمل خاتمے کے لئے سنجیدہ اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا گیا ہے.

قرارداد میں اس کے ساتھ تشدد اور انتہاپسندی کو دنیا کے دو اہم چلینجز قرار دیا گیا جس کی مذمت کی گئی.

قرارداد میں عالمی امن و ترقی اور دہشتگردی کی لعنت کے خاتمے کے لئے تمام ممالک کے درمیان اجتماعی تعاون اور مکالمت کی ضرورت پر بھی زور دیا گیا.

اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل مندوب 'غلام علی خوشرو' نے قرارداد کی منظوری کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے قرارداد کی منظوری تشدد اور انتہاپسندی کے خلاف وطن عزیز ایران کی کوششوں کی عالمی سطح پر حمایت ہے.

یاد رہے سپتمبر 2013 میں اقوام متحدہ کے 68ویں اجلاس کے موقع پر ایرانی صدر ڈاکٹر 'حسن روحانی' کے تشدد اور انتہا پسندی سے پاک دنیا کے نظریہ کو بہت سراہا گیا.

اس حوالے سے تہران میں تشدد اور انتہا پسندی کے خلاف عالمی کانفرنس کا بھی انعقاد کیا گیا جس میں مختلف ممالک بشمول ہمسایہ ممالک کے سنئیر حکام اور اعلی شخصیات نے شرکت کی.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@