ایران جوہری معاہدے کو تبدیل نہیں کیا جاسکتا: فرانسیسی صدر

تہران، 19 ستمبر، ارنا - فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ جوہری معاہدہ ایران کے ساتھ باہمی تعاون کے فروغ کی بنیاد اور اسے تبدیل نہیں کیا جاسکتا.

یہ بات صدر 'ایمانوئل میکرون' نے اسلامی جمہوریہ ایران کے نئے سفیر 'ابوالقاسم دلفی' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر اس موقع پر ایران کے سفیر نے اپنی اسناد تقرری فرانسیسی صدر مملکت کو پیش کیں.

فرانس کے صدر کا کہنا تھا کہ ان کا ملک اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ تعاون اور تعمیری تعلقات قائم کرنے کا خواہاں ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ جوہری معاہدے کے حوالے سے ہماری اہم ترجیح اس عالمی معاہدے کے تحفظ اور اس پر مکمل عملدرآمد کرنا ہے.

انہوں نے فرانس کی خارجہ پالیسی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم ایران کے ساتھ علاقائی تبدیلیوں پر مذاکرات کرنے کا خیرمقدم کرکے دونوں ممالک کی وزارتوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات پر خوش ہیں.

ایرانی نئے سفیر نے دونوں ممالک کے درمیان دیرینہ تعلقات کو اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ جوہری معاہدے کے بعد سیاسی، اقتصادی، ثقافتی اور سائنسی تعلقات میں مزید مضبوطی مل گیا ہے اور ایرانی صدر 'حسن روحانی' کے دورے فرانس کے ساتھ اور باہمی تعاون کے معاہدوں پر دستخط کرنا اس تعلقات کو آگے بڑھ سکا.

دلفی نے علاقائی تبدیلیوں کے حوالے سے ایرانی مؤقف پر روشنی ڈالی اور مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران علاقائی مسائل کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے اور غیرملکی مداخلت کو روکنے پر زور دیتا ہے.

9393*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@