انقلابی طرز عمل سے دفاعی قابلیت میں اضافہ قائد انقلاب کی توقع ہے: ایرانی سپہ سالار

تہران، 19 دسمبر، ارنا - ایرانی مسلح افواج کے سپہ سالار نے کہا ہے کہ ہماری پالیسی ملک کی فوج کو مزید مضبوط کرنا ہے جبکہ قائد اسلامی انقلاب کی بھی ہم سے یہ توقع ہے کہ انقلابی طرز عمل سے دفاعی قابلیت میں مزید اضافہ کریں.

یہ بات میجر جنرل 'محمد حسین باقری' نے منگل کے روز مسلح افواج کے کماندڑوں کی موجودگی میں 'انقلابی فوج' کے عنوان سے منعقدہ کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے ایرانی مغربی صوبے کرمانشاہ کے حالیہ زلزلے میں مسلح افواج کی بروقت موجودگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ اسلامی انقلاب کے دشمن ایرانی مسلح افواج کے درمیان سازشیں کرنے کے لئے کوئی موقع سے استعمال کر رہے ہیں مگر ہماری مسلح افواج اپنی ہوشیاری کے ساتھ باہمی اتحاد برقرار رکھتے ہیں.

میجر جنرل باقری نے کہا کہ منعقدہ قومی اجلاس کا نام 'انقلابی فوج' ایرانی سپریم لیڈر کی درخواست پر توجہ دینا اور مسلح افواج کی بہادریوں کی علامت ہے.

انہوں نے مغربی ایشیاء کی خطرناک صورتحال کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آج ہم خطے میں تکفیری دہشتگردوں کو شکست دے سکے ہیں مگر دشمن اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف بھرپور کاروائی کر رہا ہے تو ہمیں ہوشیار رہنا چاہیئے.

انہوں نے مزید کہا کہ مغربی ایشیا کے خطے میں اسلامی جمہوریہ ایران کے موثر کردار دشمنوں کے موقف کو خطرے میں ڈال کرکے لہذا وہ بالخصوص بعض علاقائی ممالک اسلامی دنیا میں سازش پیدا کرنے کے ساتھ ہمارے موثر کردار کو روکنا چاہتے ہیں.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران سے نمٹنے کے لئے دشمنوں کی سازشیں جاری ہے اور شام اور عراق میں تکفیری دہشتگردوں کی شکست کے بعد انہوں نے بیت المقدس کو صہیونی دارالحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ کیا جو اللہ تعالی کی مدد کے ساتھ ناکام ہوں گے.

ایرانی مسلح افواج کے سربراہ نے دفاعی پالیسی ڈیٹرنس بڑھانے کو مسلح افواج کی اہم ذمہ داری قرار دیتے ہوئے کہا کہ دفاعی پالیسی ڈیٹرنس دشمنوں کی سازشوں کا ڈوٹوک جواب ہے جو اس کے ذریعہ دشمن ہمارے ملک پر حملے کی جرات نہیں رکھتا ہے.

انہوں نے دشمنوں کی جانب سے ایران فوبیا کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ دشمن کی بڑی سازش ہے اور وہ علاقائی ممالک کو بڑی تعداد میں ہتھیار بھیج کر رہے ہیں مگر جان لیں کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف جنگ ان کے لئے بہت ہی ضرر رساں ہوجائے گا.

جنرل باقری نے دشمنوں کی سازشوں کے مقابلہ کرنے کے لئے مسلح افواج کی ہوشیاری پر زور دیتے ہوئے کہا کہ انقلابی طریقوں سے دشمنوں کو شکست دے سکتے ہیں اور ایرانی سپریم لیڈر کی ہدایات کے مطابق انقلابی طریقوں سے دفاعی صلاحیتوں کو فروغ دینا ملک میں یکجہتی اور باہمی اتحاد قائم کرے گا.

انہوں نے دشمنوں کے ثق‍افتی حملوں سے نمٹنے کے لئے تعلیم، تحقیق اور مزاحمت پر زور دیتے ہوئے ایرانی مسلح افواج کی اعلی کارکردگیوں کی تعریف کی.

تفصیلات کے مطابق، 'انقلابی فوج' کے عنوان سے ایرانی مسلح افواج کے کماندڑوں کے دو روزہ قومی اجلاس کا آج بروز منگل ایرانی دارالحکومت تہران میں آغاز کیا گیا جس میں اعلی ایرانی کمانڈروں نے شرکت کی.

9393*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@