سرحدی علاقوں سے بڑھ کر ایران کی سیکورٹی کیا خیال رکھتے ہیں: ایڈمیرل شمخانی

سنندج، 18 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ آج وطن عزیز میں موجود سیکورٹی کا نظام سرحدی علاقوں میں موجود سیکورٹی کے مقابلے میں زیادہ مضبوط ہے.

یہ بات ایڈمیرل 'علی شمخانی' نے پیر کے روز ایران کے مغربی صوبے کردستان کے شہر 'سنندج' کے دورے کے موقع پر یونیورسٹی کے اساتذہ اور طلبا کے ساتھ ایک خصوصی نشست میں خطاب کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ جس دن سرحدوں پر موجود سلامتی پی ہی انحصار کیا جائے تو اس دن کے بعد ہماری قوم مستقل طور پر اپنا فیصلہ نہیں کرسکے گی.

انہوں نے کہا کہ اگر داعش کے خلاف شام اور عراق کی حمایت نہ کرتے تو آج داعش اور دیگر گروہوں کے دہشتگرد عناصر ہماری جگہ فیصلہ لے رہے ہوتے.

ایران کی اندرونی سیکورٹی کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے ایڈمیرل شمخانی نے کہا کہ ملکی سلامتی پر کسی بھی قسم کی تشویش کا سامنا نہیں کررہے اور یہ بات نہایت اہم ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ شام اور عراق میں جو قیمت ہم نے چکائی ہے اس کا مقصد ایران کی اندرونی سیکورٹی کو یقنی بنانا تھا جبکہ شام اور عراق کی مارکیٹ مستقبل میں ہمارے لئے اچھی سرمایہ کاری بنیں گی.

ایڈمیرل علی شمخانی نے کہا کہ ایرانی عوام ایک باوقار اور عزتمند قوم ہے جس نے سختیوں کو برداشت کرکے اقتصادی مشکلات پر فائق آئی ہے.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہم سب کو ترقی اور استحکام کے لئے ایک پیج پر موجود رہنا ہوگا کیونکہ سیکورٹی، خوشحالی اور ترقی اجتماعی تعاون کے بغیر ممکن نہیں ہے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@