پاکستان میں چرچ پر حملے کی مذمت، داعش دنیا میں بدامنی کی خواہاں ہے: ایران

تہران، 18 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے پاکستانی شہر 'کوئٹہ' کے گرجاگھر پر بزدلانہ دہشتگردی کے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ داعش خطے اور دنیا میں بدامنی اور عدم استحکام کی خواہاں ہے.

ترجمان دفترخارجہ 'بہرام قاسمی' نے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں گرجاگھر پر خودکش حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اس واقعے پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کیا.

انہوں کوئٹہ چرچ کے سانحے پر پاکستانی قوم اور حکومت کے ساتھ تعزیت کرتے ہوئے جاں بحق ہونے والے لواحقین سے ہمدردی کا اظہار کیا.

قاسمی نے مزید کہا کہ دہشت گردی، انتہا پسندی اور کسی بھی مقصد کے لئے معصوم لوگوں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈالنا، غیر اسلامی اور غیر انسانی اقدام ہے.

انہوں نے کہا کہ صہیونی حمایت یافتہ داعش کے تکفیری دہشتگرد دنیا میں افراتفری اور بدامنی کا سلسلہ جاری رکھنے کے خواہاں ہیں اس کے علاوہ یہ عناصر اپنی حالیہ شکست کے بعد خطے کے دیگر علاقوں میں نہتے انسانوں کو خون میں نہلانے کے لئے شیطانی منصوبہ بندی پر چل رہے ہیں.

بہرام قاسمی نے مزید کہا کہ داعش کے دہشتگرد جن کو بعض علاقائی اور غیرعلاقائی کی حمایت حاصل ہے، کو خطے کی بہادر اقوام کی مزاحمت کے ذریعے عبرتناک شکست ملی ہے مگر اس غیرانسانی گروہ سے وابستہ بچ جانے والے بعض عناصر بزدلانہ کاروائیوں کے ذریعے اقوام کے اتحاد اور عزم کو متاثر کرنا چاہتے ہیں.

گزشتہ اتوار کے روز پاکستانی صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں واقع دو گرجا گھر کے باہر فائرنگ اور ایک خودکش دھماکے کے کے نتیجے میں 9 افراد جاں بحق اور متعدد لوگ زخمی ہوئے.

اس ہولناک دہشتگردی کی ذمہ داری بدنام زمانہ کالعدم تنظیم داعش نے قبول کرلی.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@