ایران کیساتھ مفاہمت میں مشرق وسطی کا فائدہ ہے: خاتون یورپی رہنما

ویانا، 13 دسمبر، ارنا - یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے یورپی پارلیمنٹ میں ایران اور عالمی قوتوں کے درمیان طے پانے والے جوہری معاہدے کا دفاع کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ ایران کے ساتھ مفاہمت سے مشرق وسطی کے خطے کے لئے فائدہ ہوگا.

'فیڈریکا مغرینی' نے یورپی پارلیمنٹ کے اراکین کی موجودگی میں خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ مجھے یقین ہے کہ امریکہ جوہری معاہدے کے حوالے سے اپنے وعدوں پر قائم رہے گا اور امریکی وزیرخارجہ نے بھی اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے.

انہوں نے کہا کہ مشرق وسطی کی ابتر صورتحال اور دنیا میں موجود خطرات کو دیکھتے ہوئے ایران جوہری معاہدے کے تحفظ اور اسکے من و عن اجرا کی اشد ضرورت ہے.

خاتون یورپی رہنما نے مزید کہا کہ بین الاقوامی جوہری توانائی ادارے نے سینکڑوں معائنہ کرنے کے بعد اپنی 9 رپورٹس میں اس بات کی تصدیق کردی ہے کہ ایران اپنے وعدوں پر قائم ہے اور اس کے علاوہ یورپی ممالک نے بھی کسی تشویش کا اظہار نہیں کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ جامع ایٹمی سمجھوتے کے ذریعے ایران کی پُرامن جوہری سرگرمیوں کو یقینی بنایا گیا جس میں تمام دنیا بشمول یورپی ممالک اور خطے کا فائدہ ہے.

انہوں نے کہا کہ سفارتکاری مسائل کو پُرامن طریقے سے حل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے لہذا ایران کے ساتھ طے پانے والے معاہدے نے خطے میں نئے جوہری پھیلاؤ کے خدشات کو دور کردیا.

ایران کے ساتھ پُرامن جوہری ٹیکنالوجی کے شعبے میں مشترکہ تعاون کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے فیڈریکا مغرینی نے کہا کہ اس عمل سے ایان جوہری معاہدے کے بہتر نفاذ کے لئے مدد ملے گی.

274**

ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@