ایران کا غیرملکی سرمایہ کاری کیساتھ  کئی صنعتی، کان کنی اور تجارتی منصوبوں کا نفاذ

تہران، 12 دسمبر، ارنا – ایرانی وزارت صنعت، کان کنی اور تجارت کے منیجینگ ڈائریکٹر برائے غیرملکی سرمایہ کاری امور نے کہا ہے کہ ہمارے ملک میں غیرملکی سرمایہ کاری کے ساتھ صنعتی، تجارتی اور کان کنی شعبوں میں 106 منصوبے مکمل ہوگئے ہیں.

یہ بات 'افروز بہرامی' نے گزشتہ روز نائب ایرانی وزیر صنعت، کان کنی اور تجارت 'رضا رحمانی' کے ساتھ ایک پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ ایرانی گیارھویں حکومت کی ابتداء سے اب تک 252 منصوبے منظور ہوگئے ہیں جس سے 106 منصوبے کے نفاذ کا آغاز کیا گیا ہے.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ایرانی گیارھویں حکومت صنعت، کان کنی اور تجارت کے شعبوں میں 11 ارب ڈالر سرمایہ کاری کی گئی ہے جو اس حجم سے 2 ارب ڈالر 12 ویں حکومت سے متعلق ہے.

بہرامی نے کہا کہ ہمارے ملک میں تقسیم کے لحاظ سے غیرملکی سرمایہ کاری مختلف ہیں اور ایران کے فارس، بوشہر اور کرمان کے صوبوں نے سب سے زیادہ سرمایہ کاروں کو راغب کیا ہے.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں جرمنی، اٹلی اور چین سب سے زیادہ سرمایہ کاری کر رہے ہیں.

ایرانی عہدیدار نے کہا کہ غیرملکی سرمایہ کار ابھی صورتحال میں بھاری دھاتیں اور پیٹروکیمیکل کے علاوہ چین اسٹورز، موٹر گاڑیاں اور دوسرے شعبوں میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں.

9393*274**

ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@