بحرینی حکام کے وفد کی جانب سے مقبوضہ فلسطین کا دورہ ایک غلط اور شرمناک اقدام تھا: ایران

تہران، 11 دسمبر، ارنا - ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے اس بات پر زور دیا ہے کہ بحرینی حکام کے وفد کی جانب سے مقبوضہ فلسطین کا دورہ ایک غلط اور شرمناک اقدام تھا.

يہ بات 'بہرام قاسمي' نے پير كے روز ايك پريس كانفرنس ميں صحافيوں كے ساتھ گفتگو كرتے ہوئے كہي.

اس موقع پر انہوں نے كہا كہ امريكي صدر كي جانب سے بيت المقدس كو اسرائيل كا دارالحكومت تسليم كرنے كے اقدام كے موقع پر بحريني وفد كي جانب سے اس مقبوضہ ملك كا دورہ اس بات كي نشاندہي كرتا ہے كہ بعض عرب ممالك ٹرمپ كے جاہلانہ فيصلے كي حمايت كر رہے ہيں.

قاسمي نے بحيرہ كيسپين كنونشن كا حوالہ ديتے ہوئے كہا كہ بحيرہ كيسپين كے قانوني كنونشن كے حوالے سے اچھے اقدامات كئے گئے ہيں.

انہوں نے فرانسيي صدر كے ايران كے دورے كے حوالے سے كہا كہ اسلامي جمہوريہ ايران اور فرانس كے درميان اچھے تعلقات قائم ہيں اور جلد سے فرانسيسي صدر ہمارے ملك كا دورہ كرے گا.

ايراني وزارت خارجہ كے ترجمان نے كہا كہ قريب مستقبل ميں فرانس كے وزير خارجہ دوطرفہ تعلقات اور علاقائي امور پر بات چيت كرنے كے لئے ہمارے ملك كا دورہ اور اعلي ايراني حكام كے ساتھ ملاقاتيں كريں گے.

خيال رہے كہ بحريني حكام كے اعلي وفد نے اسرائيل كا دورہ ايك ايسے وقت ميں كيا ہے كہ پورے عالم اسلام ميں امريكہ اور اسرائيل كے خلاف نعرہ بلند كئے جا رہے ہيں.

9393*274**

ہميں اس ٹوئٹر لينك پر فالو كيجئے. IrnaUrdu@