افغانستان کا ایران کیساتھ مشترکہ ٹرانسپورٹیشن کمپنی کے قیام پر زور

کابل، 11 دسمبر، ارنا - افغانستان وسطی اور مغربی ایشیائی خطے کے ممالک کے ساتھ اپنے تجارتی تعلقات کو مزید بڑھانے کے لئے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ مشترکہ ٹرانسپورٹیشن کمپنی کے قیام کا خواہاں ہے.

یہ بات افغان وزارت صنعت و تجارت کے ترجمان 'مسافر قوقندی' نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا افغانستان تجارتی سرگرمیوں کے فروغ اور ٹرانزٹ سہولیات کے لئے ایران کے ساتھ مل کے مشترکہ ٹرانسپورٹیشن کمپنی کے قیام کو ضروری سمجھتا ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ اسی ضرورت کو مد نظر رکھتے ہوئے مشترکہ کمپنی کے قیام ناگزیر ہے جس کی مدد سے دونوں ممالک موثر پلاننگ اور بین الاقوامی سطح پر مصنوعات کی ٹرانسپورٹیشن کو آسان بنا سکیں گے.

ایران اور افغانستان کے درمیان تجارتی اور ٹرانزٹ کے شعبوں میں موجودہ تعاون پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے مسافر قوقندی نے مزید کہا کہ چابہار بندرگاہ کے افتتاح سے دوطرفہ تعاون کو مزید فروغ ملے گا.

انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران سے مطالبہ کیا کہ افغان تاجروں کو چابہادر بندرگاہ کے مثبت پہلووں سے بہتر واقف ہونے کے لئے اس بندرگاہ کی خصوصی تشہیری اقدامات کرے جس سے چابہار بندرگاہ کے موثر کردار پورے خطے اور عالمی سطح پر اُجاگر ہو.

افغان عہدیدار نے بتایا کہ ہم چابہادر سے نہ صرف گندم بلکہ دوسری مصنوعات کی برآمدات کو بھی یقینی بنائیں گے.

انہوں نے مزید کہا کہ افغان وزارت تجارت ایران کے ساتھ دوطرفہ تعاون کو بڑھانے کے لئے برآمدات اور درآمدات کی سطح میں مزید بہتری لائے گی.

274**

ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@