القدس پر ٹرمپ کی شیطانی سازش کیخلاف ایرانی عوام کا ملک گیر احتجاج

تہران، 8 دسمبر، ارنا - بیت المقدس کے حوالے سے ڈونلڈ ٹرمپ کی شیطانی سازش کے خلاف ایرانی دارالحکومت تہران سمیت مختلف شہروں میں آج کروڑوں فرزنان اسلام نے نماز جمعہ کے بعد فلسطین کے حق اور سامراجی قوتوں بالخصوص امریکہ اور اسرائیل کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے.

تفصیلات کے مطابق، آج تہران سمیت ایران کے ایک ہزار سے زائد بڑے اور چھوٹے شہروں اور دیہی علاقوں میں نماز جمعہ کے اختتام کے بعد القدس کے حوالے سے امریکی صدر کے شیطانی فیصلے کے خلاف احتجاج کا انعقاد کیا.

ایرانی عوام نے سامراجی نظام اور عالمی صہیونی لابی کے خلاف اپنے شدید غصے کا اظہار کرتے ہوئے، فلسطین اور اسلام کے مقدس مقام القدس کے خلاف امریکی صدر کے شیطانی فیصلے کی شدید الفاظ میں مذمت کی.

ایران کے تمام صوبائی دارالحکومتوں میں نماز جمعہ کے بعد ریلیوں کا آغاز ہوا اور اس دوران ایرانی عوام نے امریکہ مردہ باد، اسرائیل مردہ باد، ناجائز صیہونی ریاست مردہ باد اور ھیھات منا الذلہ کے نعرے لگائے.

ایرانی عوام نے سامراجی قوتوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی قوم ہرگز فلسطینی عوام کو تنہا نہیں چھوڑے گی.

خیال رہے کہ عالمی مخالفت کے باوجود امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے امریکی سفارت خانے کو تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرنے کی ہدایات جاری کردیں.

ایرانی سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے اپنی حالیہ تقریر میں فرمایا تھا ہے کہ اغیار کی جانب سے القدس شریف کو صہیونیوں کے دارالحکومت قرار دینا ان کی بے بسی کی علامت ہے جبکہ فلسطین آزاد ہوگا اور فلسطینی عوام کو فتح ملے گی.

انہوں نے مزید فرمایا کہ مسئلہ فلسطین پر ان کے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں اور وہ اپنے مقاصد تک نہیں پہنچ سکتے.

اس کے علاوہ صدر اسلامی جمہوریہ ایران ڈاکٹر حسن روحانی نے حال ہی میں علاقائی اقوام کے خلاف عالمی سامراج، امریکی اور صہیونی سازشوں اور مہم جوئی کا ذکر کرتے ہوئے اس بات پر انتباہ کیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، سامراجی قوتوں کی جانب سے اسلامی مقدسات پر جارحیت کو ہرگز برداشت نہیں کرے گا.

274**

ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@