امریکہ میں ایرانی نوجوان کے قتل پر حکومت ایران کا امریکہ سے احتجاج

تہران، 5 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے امریکہ میں گزشتہ دنوں ایک ایرانی نوجوان کے قتل پر امریکہ سے باضابطہ طور پر احتجاج کیا ہے.

ترجمان دفتر خارجہ 'بہرام قاسمی' کے مطابق، 25 سالہ 'بیژن قیصر' کے قتل پر حکومت ایران نے امریکی معاملات کو دیکھنے والے ایران میں تعینات سویٹزرلینڈ کے سفیر کے ساتھ احتجاج کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ دفترخارجہ کے ڈائریکٹر جنرل برائے امریکی امور نے سوئس سفیر کو احتجاجی مراسلہ حوالے کردیا.

انہوں نے کہا کہ اس احتجاجی مراسلے میں 27 نومبر 2017 کو امریکی ریاست ورجینیا کے علاقے مکیلین میں امریکی پولیس اہلکاروں نے غیرمسلح ایرانی شہری بیژن قیصر پر بے رحمانہ طور پر فائرنگ کی جو نہایت افسوسناک اور ناقابل قبول ہے.

قاسمی نے مزید کہا کہ ایران نے اس واقعے پر امریکہ سے جواب طلب کیا ہے اور ہم نے امریکی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس واقعے کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچائے.

ایران میں امریکی معاملات دیکھنے والے سوئیس سفیر نے اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ جلد امریکی وزارت خارجہ اس معاملے سے آگاہ کریں گے.

9410*274**

ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@