اسلامو فوبیا داعش سے پہلے شروع ہوا : ایرانی وزیر خارجہ

تہران ، 03 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ جود ظریف نے کہا ہے کہ مغربی ممالک نے خطے میں اپنے مقاصد کے حصول کے لئے ایرانو فوبیا، اسلامو فوبیا اور شیعہ فوبیا کو ہوا دے کراسلامی اقداراور چہرے کو مسخ کرنے کی کوشش کی ہے.

مغربي ممالك كے جوانوں كو ايراني سپريم ليڈر كي طرف سے بھيجے گئے خط كا ايك سال مكمل ہونے كے بعد انہوں نے ايك تقريب ميں كہا كہ اسلامي جمہوريہ ايران كے سپريم ليڈر آيت اللہ سيد علي خامنہ اي كا يہ خط اس لئے اہميت كا حامل ہے كہ اس سے مغربي ممالك كے جوانوں اور نوجوانوں كو بہت سي حقيقتيں واضح ہونے ميں مدد دي تھيں.


انہوں نے خطے ميں مغربي ممالك كے شيطاني اہداف كا حوالہ ديتے ہوئے كہا كہ استكباري طاقتوں كا طريقہ ہميشہ يہ رہا ہے كہ اپنے اہداف كے حصول كے لئے ايك دشمن تخليق كرتے ہيں اور پھر اسے خاتمے كے لئے ايك جھوٹے كمپين چلاتے ہيں.


ايراني وزير خارجہ نے مزيد كہا كہ داعش بننے سے پہلے مغربي ممالك نے اسلامو فوبيا اور ايرانو فوبيا كے كمپين چلايا تھا، مغربي ممالك اپنے دشمن كو ختم كرنے كرنے كے لئے ہميشہ ايك اور دشمن كي تخليق ميں اہم كردار ادا كرنے نظر اتے ہيں.


گزشتہ سال ايران كے سپريم ليڈر آيت اللہ سيد علي خامنہ اي نے يورپي نوجوانوں اور جوانوں كے نام سےايك خصوصي پيغام ميں اس بات پر زور ديا تھا كه يورپي نوجوان طبقه اسلام كے ساتھ باہمي عزت پر مبني تعلقات اور مشترك لائحه عمل اختيار كريں اور مغربي ممالك كے باطل حاكموں كے اسلام مخالف تشہيراتي مہم كے دھوكے ميں نہ آئيں.


1*271**


ہميں اس ٹوئٹر لينك پر فالو كيجئے. IrnaUrdu@