دین پر مبنی نئی تحریکیں خطے کے استحکام کے لئے اہم کردار ادا کرسکتے ہیں : خرازی

تہران ، 03 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے اسٹریٹجک خارجہ روابط کونسل کے سربراہ 'کمال خرازی'نے کہا ہے کہ لبنان کے حزب اللہ عراق کے حشد الشعبی اور یمن کے انصاراللہ کی تحریکیں خطے میں امن و امان کی بحالی کے لئے اہم کردار ادا کرسکتے ہیں.

تہران ميں "مغربي ايشياء ميں سيكورٹي" كے عنوان سے ايك كانفرنس ميں شركت كے بعد صحافيوں سے بات چيت كرتے ہوئے انہوں نے كہا كہ اسلامي جمہوريہ ايران خطے ميں وہ واحد خودمختار ملك ہے جس پر عالمي طاقتيں ان كے اندروني معاملات ميں مداخلت نہيں كرسكتي.


انہوں نے كہا ايران دوسرے ممالك كے عوام كے لئے ايك نمونہ عمل ہے اس لئے ہم اس پر فخر محسوس كرتے ہيں.
كمال خرازي نے كہا كہ حزب اللہ نے ناجائز صيہوني رياست ، حشد الشعبي نے عراق ميں دہشت گرد تنظيم داعش اور يمن ميں انصاراللہ كي تنظيم نے اپنے ملك كي بقاء اور اسلامي اقدار كي سربلندي كے لئے جارح طاقتوں كے خلاف لڑرہے ہيں اور يہ سب كچھ ايران كے اسلامي انقلاب كے نتيجے ميں ہورہا ہے.


خطے ميں اسلام بيداري كي اہميت بتاتے ہوئے انہوں نے كہا كہ استكباري طاقتيں طاغوتي نظام كے خلاف لڑنے والے تحريكوں كو دہشت گرد كا ٹائٹل ديتے ہوئے انہيں ختم كرنے كي ناكام كوشش كررہي ہيں.


1*271**


ہميں اس ٹوئٹر لينك پر فالو كيجئے. IrnaUrdu@