ایرانی بھاری پانی خریدنے کے حوالے سے وائٹ ہاؤس کے اظہار ناراضگی، امریکہ کا مسئلہ ہے: ایرانی جوہری توانائی ادارے کے سربراہ

تہران، 2 دسمبر، ارنا – ایرانی جوہری توانائی ادارے کے سربراہ نے امریکی حکومت کی جانب سے ایرانی بھاری پانی خریدنے کو روکنے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس حوالے سے وائٹ ہاوس کے اظہار ناراضگی امریکہ خود ہی مسئلہ ہے.

یہ بات 'علی اکبر صالحی' نے گزشتہ روز ایرانی جوہری پروفیسر 'مجید شہریاری' کی شہادت کی ساتویں سالگرہ کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ سابق امریکی حکومت نے 30 ٹن ایرانی بھاری پانی خریدتے ہوئے اس کام کے تسلسل پر دلچسبی کا اظہار کیا تھا مگر اس ملک کی نئی حکومت نے ایران سے بھاری پانی خریدنے کو روک کر دیا.

صالحی نے جوہری معاہدے کے حوالے سے ایران کی بعض تنقیدوں کو اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے بار بار زور دیا کہ تمام فریقون کو اس عالمی معاہدے کے مطابق عمل کرنا چاہیئے.

ایرانی جوہری توانائی ادارے کے ترجمان 'بہروز کمالوندی' نے کہا کہ ایران سے بھاری پانی خریدنے کو روکنا صرف ایک میڈیا کھیل کی حد تک ہے.

9393**

ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@