آرمینیا کے صدر ڈاکٹر روحانی کی تقریب حلف برداری میں شرکت کریں گے

ماسکو - ارنا - آرمینیائی صدارتی محل نے ایک بیان میں کہا ہے کہ صدر 'سرژ سرگسیان' اسلامی جمہوریہ ایران کے 12ویں صدر ڈاکٹر 'حسن روحانی' کی تقریب حلف برداری میں شرکت کریں گے.

1991 میں آرمینیا کی آزادی کے بعد بعد دونوں ممالک کے تعلقات مضبوطی کی طرف بڑھتے رہے اور صدر سرگسیان کے آئندہ دورہ ایران سے ان تعلقات کو مزید فروغ ملے گا.

گزشتہ جنوری میں صدر اسلامی جمہوریہ ایران حسن روحانی نے ایک اعلی سطح وفد کی قیادت میں آرمینیا کا دورہ کیا جہاں دونوں ممالک نے مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ متعدد معاہدوں اور سمجھوتوں پر دستخط کردئے.

آرمینیا، ایران کے علاوہ ترکی، جمہوریہ آذربایئجان اور جارجیا کا ہمسایہ ملک ہے.

اسلامی جمہوریہ ایران کے 12ویں صدر ڈاکٹر 'حسن روحانی' کی تقریف حلف برداری 5 اگست بروز ہفتہ کو پارلیمنٹ میں منعقد کی جائے گی.

یاد رہے کہ ایرانی مجلس (پارلیمنٹ) نے باضابطہ طور پر اعلان کیا کہ 5 اگست کو پارلیمنٹ کے خصوصی سیشن کا انعقاد کیا جائے گا جس میں ایران کے 12ویں صدر جناب ڈاکٹر حسن روحانی کی تقریب حلف برداری ہوگی.

مجلس میں صدارتی حلف برداری سے پہلے ایران کے سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ العظمی 'سید علی خامنہ ای' کی جانب سے ایران کے منتخب صدر کو باضابطہ صدارتی حکم نامہ پیش کرنے کی تقریب بھی منعقد ہوگی اور توقع کی جاتی ہے کہ یہ تقریب یکم یا دو اگست کو ہوگی.

پارلیمنٹ میں منتخب صدر کی تقریب حلف برداری کا انعقاد کیا جائے گا اور اس کے بعد صدر مملکت کے پاس اپنی کابینہ کے وزرا کو مجلس کے سامنے پیش کرنے کے لئے دو ہفتوں کی مہلت ہوگی جس کے بعد پارلیمنٹ کے اراکین ایک ہفتہ کے اندر نامزد وزرا کی اہلیت کا جائزہ لیں گے اور اس کے بعد اعتماد ووٹ حاصل کرنے کا اجلاس رکھا جائے گا.

19 مئی کو ہونے والے صدارتی انتخابات کے نتائج کے مطابق ڈاکٹر حسن روحانی 57 فیصد ووٹ لے کر کامیاب امیدوار قرار پائے ہیں.

حسن روحانی 23 ملین 5 لاکھ 49 ہزار 616 ووٹ کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں اور انہوں نے کل ووٹوں میں سے 57 فیصد ووٹ حاصل کر کے کامیابی اپنے نام کرلی ہے.

حلف برداری کے موقع پر ایران کے نئے صدر چیف جسٹس اور گارڈین کونسل کے اراکین کی موجودگی میں اپنے عہدہ کا حلف اٹھائیں گے.

1*274**