ایران نے موصل کی آزادی کیلئے قابل قدر مدد فراہم کی: عراقی سفیر

ایتھنز - ارنا - یونان میں تعینات عراق کے سفیر نے داعش دہشتگردوں کے قبضے سے موصل کی آزادی کی کوششوں کا ذکر دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے اس سلسلے میں عراق کو قابل قدر مدد فراہم کی.

یہ بات 'غازی زیباری' نے گزشتہ روز یونانی دارالحکومت ایتھنز میں واقع عراقی سفارتخانے میں موصل کی جشن آزادی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے عراق میں داعش دہشتگردوں کے حملوں کے نتیجے میں بنیادی ڈھانچے میں پہنچنے والے نقصاں کو اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ عراق کے بعض شہروں بالخصوص اس ملک کے دوسرے بڑے شہر موصل مکمل طور پر تباہ، تیل کے وسائل کو لوٹا اور دیگر ممالک کو فروخت کی جاتی ہے.

زیباری نے کہا کہ دہشتگردوں نے ہمارے ملک کے بنیادی ڈھانچے کے علاوہ قدیمی ورثہ کو تباہ کردیا مگر عوامی فوج کے لئے قومی سلامتی اور شہروں کی آزادی پہلی ترجیح تھا.

انہوں نے کہا کہ مذہبی رہنماؤں کی ہدایت، عراقی مسلح افواج بشمول حشد الشعبی فورس کی بہادری اور حکومت کے مضبوط ارادے کے ذریعے موصل کو مکمل آزادی مل گئی اور داعش کے دہشتگردوں کی سنگین شکست ہوئی.

عراقی سفیر نے کہا کہ ابھی صورتحال میں امریکہ، برطانیہ، سعودی عرب، متحدہ امارات، کویت، بعض علاقائی اور غیرعلاقائی دوسرے ممالک عراق کے شہروں کی بحالی کے لئے اپنی تیاری کا اعلان کرتے ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ عرب ممالک کی غلطی رویے کے نتیجے میں داعش دہشتگرد گروپ قائم ہوگیا اور لیبیا، عراق، شام اور یمن سخت مسائل اور بحران کا شکار ہیں.

9393*274**