نئی امریکی پابندیاں غیرقانونی ہیں، جلد جوابی ردعمل دیں گے: ایران

تہران - ارنا - ایرانی دفترخارجہ نے ایران مخالف نئی امریکی پابندیوں کو غیرقانونی اور بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایران بھی جوابی ردعمل میں امریکی شخصیات اور کمپنیوں پر پابندیاں لاگو کرے گا.

دفترخارجہ کے ایک بیان کے مطابق، ایرانی قوم اور دیگر مسلم اقوام کے خلاف سازشوں میں ملوث بعض امریکی شخصیات اور کمپنیوں پر پابندی لگانے کے حوالے سے تفصیلات کا جلد اعلان کردیا جائے گا.

اس بیان کے مطابق؛ اسلامی جمہوریہ ایران امریکہ کی نئی پابندیوں کو مسترد کرتے ہوئے اسے عالمی قوانین بالخصوص جوہری معاہدے کی خلاف ورزی سمجھتا ہے.

اس کے علاوہ نئی امریکی پابندیوں کے جواب میں بھی جلد جوابی ردعمل کا اعلان کردیا جائے گا.

دفترخارجہ کے مطابق، امریکی صدر نے کانگریس کی جانب سے ایران مخالف پابندیوں کی معطلی کو برقرار رکھنے کے بل کی توثیق کی اور اس کے تحت امریکی صدر کو ایران مخالف جوہری شعبے سے متعلق پابندیوں کو بھی معطل رکھنے کا اختیار حاصل ہے.

اس بیان میں مزید کہا گیا کہ ان تمام واضح اقدامات کے باوجود امریکی حکومت نے اپنی ناکامی چھپانے اور جوہری معاہدے سے علیحدہ ہونے کے لئے یورپی اتحادیوں کو اپنی بات منوانے کی خاطر ایرانی میزائل پروگرام کو بہانہ بنا کر ایک بار پھر بعض ایرانی شخصیات اور کمپنیوں کو یکطرفہ اور غیرقانونی پابندیوں کی فہرست میں شامل کردیا.

٢٧٤**