مغربی میڈیا نے ایران کے حوالے سے دوہرا معیار اپنایا ہے: ارنا نیوز چیف

تہران - ارنا - ارنا نیوز ایجنسی کے سربراہ نے ایران مخالف مغربی ذرائع ابلاغ کے جانبدرانہ رویے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ مغربی میڈیا کے دوہرے معیار کی وجہ سے ان ممالک میں اسلامی جمہوریہ ایران کے امن دوست چہرے کو غلط انداز میں پیش کیا جاتا ہے.

ان خیالات کا اظہار اسلامی جمہوریہ ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی (IRNA) منیجنگ ڈائریکٹر 'محمد خدادی' نے گزشتہ ارنا ہیڈ آفس میں سنئیر ہسپانوی صحافیوں اور مشہور اخبارات کے چیف ایڈٹر پر مشتمل اسپین کے صحافیوں کے وفد کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ بعض ذرائع ابلاغ اپنی ذامہ داریوں کو پوری طرح ادا نہیں کرتے، یمن کی صورتحال کو دیکھا جائے تو کیا یہ ذرائع بلاغ یمن پر دوسال سے جاری سعودی جارحیت پر کچھ بولتے ہیں؟ کیا یمن پر بمباری پر بات کرتے ہیں؟ کیا یمن پر بم برسائے نہیں جارہے اور نہتے عوام کا قتل نہیں کیا جارہا؟

انہوں نے مزید کہا کہ دوسرے ممالک کو دیکھتے ہوئے ایران کی سیاسی اور سماجی صورتحال قابل اطمینان ہے اور ایران میں انتخاباتی عمل، میڈیا کا روشن کردار اور میڈیا پسند عوام، اس ملک کی قوم کی نشانی ہے.

محمد خدادی نے کہا کہ ایرانی صدر حسن روحانی کی حکومت نے عوام کے درمیان امید کی کرن کو اُجاگر کیا اور آج ملک میں ہمارے عوام اپنے مستقبل کے لئے پُرامید اور ملک کی پیشرفت کو دیکھ رہے ہیں.

انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے وعدوں پر قائم ہے اسی لئے حالیہ انتخابات میں ایرانی عوام نے ایک بار پھر ڈاکٹر روحانی کو ووٹ دیا.

خدادی نے ایران میں سوشل میڈیا کی صورتحال کے حوالے سے کہا کہ ایران میں مختلف سوشل میڈیا سرگرم ہے مثال کے طور ٹیلی گرام، لائن، وٹس اپ اور اسنٹاگرام ان سوشل میڈیا میں شامل ہیں جن کو ایرانی عوام استعمال کرتے ہیں.

ارنا نیوز چیف نے انتہاپسندی اور دہشتگردی کے مسائل پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ہمیشہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں فرٹ لائن پر رہا ہے اور گزشتہ سالوں میں صدر حسن روحانی نے بھی ایک تجویز پیش کی جس کے تحت انتہاپسندی اور تشدد کی روک تھام کے لئے عالمی اجتماعی تعاون پر زور دیا گیا.

٢٧٤**