بڑی تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کے سخت خلاف ہیں: ایرانی وزیر خارجہ

تہران - ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ بڑی تباہی پھیلانے والی ہتھیاروں کا استعمال ہمارے عقیدہ کے خلاف ہے لہذا ایران اس قسم کے ہتیار کبھی استعمال نہیں کرے گا.

يہ بات انہوں نے سي ان ان ٹي وي کو انٹرويو ديتے ہوئے کہي.

انہوں نے صدام حسين کي طرف سے ايران کے خلاف استعمال ہونے والے کيميائي ہتھياروں کا حوالہ ديتے ہوئے کہا ہے کہ ايران خود بڑے پيمانے پر تباہي پھيلانے والے کيميايي ہتياروں کا شکار ہوچکا ہے.

انہوں نے ايران کي پرامن جوہري سرگرميوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بين الاقوامي جوہري توانائي ايجنسي نے بارہا ايران کي پرامن جوہري سرگرميوں کے حوالے سے بيان جاري کئے ہيں.

انہوں نے ايران اور مغربي طاقتوں کے درميان نافد ہونے والے مشترکہ جوہري معاہدے کي اہميت کے حوالے سے کہا کہ يہ بين الاقوامي معاہدے مسلسل کئي سال کٹھن اور سخت سفارت کاري کے ذريعے ممکن ہوئے ہيں.

ايراني وزير خارجہ نے کہا کہ ايران مشترکہ جوہري معاہدے پر عمل درآمد يقيني بنائے گا.

انہوں نے مزيد کہا کہ يورپي يونين نے بھي مشترکہ جوہري معاہدے کي حمايت کرتے ہوئے امريکہ سميت تمام فريقوں سے کہا ہے کہ وہ اس معاہدے کي پاسداري کريں.

*1*271**