جوہری معاہدے کے بعد یورپی تعلیمی مراکز ایران کیساتھ باہمی تعاون بڑھانے کیلئے پرعزم

تہران - ارنا - ایرانی وزیر صحت نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کی کامیابی کے بعد یورپی سائنسی مراکز اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ باہمی تعاون بڑھانے کے لئے پر عزم ہیں.

يہ بات ڈاكٹر 'حسن ہاشمي قاضي زادہ' نے اتوار كے روز ايراني ميڈيكل سائنسز يونيورسٹي كے تحقيق اور ٹيكنالوجي امور كے نائبين كے اجلاس ميں خطاب كرتے ہوئے كہي.

اس موقع پر انہوں نے كہا كہ جوہري معاہدے اور بعض ركاوٹوں كو دور كرنے كے ساتھ يورپي اور امريكي تحقيقي مراكز ايران كے ساتھ باہمي تعاون كا خيرمقدم كرتے ہيں اور ہميں موجودہ صورتحال ميں فراہم ہونے والے اچھے مواقعوں كا صحيح استعمال كرنا چاہيئے.

ڈاكٹر قاضي زادہ نے كہا كہ ايراني گيارہويں حكومت كي اعلي كاركردگي كے ساتھ اسلامي جمہوريہ ايران بين الاقوامي تحقيقي مراكز ميں شركت اور سائنسي كاغذات ميں قابل قدر 30 فيصد تك اضافہ ہوا ہے اور گزشتہ چار سالوں كے دوران سائنسي كاغذات 12 سے 37 ہزار تك پہنچ گئے ہيں.

انہوں نے انفارميشن ٹيكنالوجي كي سپريم كونسل كي قيام كا حوالہ ديتے ہوئے كہا كہ ٹيكنالوجي كے شعبے كي مدد كے ساتھ صحت كي ترقي كے منصوبے كا نفاذ ايراني موجودہ حكومت كي كاميابيوں ميں سے ايك ہے اور پائيدار اقتصاد كے ذريعہ سائنس اور ٹيكنالوجي كو فروغ دے سكتے ہيں.

ايراني وزير صحت نے دنيا كي نامور اور ذہين خاتون ايراني رياضي دان مرحومہ 'مريم مرزاخاني' كے انتقال پرملال پر گہرے رنج و غم كا اظہار كرتے ہوئے كہا كہ دوسرے ايراني ذہين افراد كي پہچان نہايت اہم ہے.

9393*271**