عالمی جوہری معاہدے کی ہر صورت حفاظت ہونی چاہئے : روسی ماہر جغرافیات

ماسکو - ارنا - روس کے ایک معروف ماہر جغرافیات نے کہا کہ امریکہ کے علاوہ مغربی طاقتیں ایران کے ساتھ طے ہونے والے مشترکہ جامع منصوبہ کی حمایت جاری رکھے ہوئے ہیں.

يہ بات روسي اكيڈمي برائے جيوپوليٹيكل مسائل كے صدر لئونيد اواشوف نے ارنا كے نمائندے كے ساتھ گفتگو كرتے ہوئے كہي.

انہوں نے كہا كہ امريكہ جوہري معاہدے كے خاتمہ كے لئے مختلف بہانے ڈھونڈ رہا ہے جس ميں اب تك ان كو ناكامي ہوئي ہے.

يورپي ممالك كي جانب سے جوہري معاہدے پر عملدرآمد كے حوالے سے انہوں نے كہا كہ جوہري معاہدے كے بارے ميں يورپي ممالك اور امريكہ كي پاليسيوں ميں واضح اختلاف پايا جاتا ہے.

ايران اور مغربي طاقتوں كے درميان جوہري معاہدے كے نفاذ كے دو سال مكمل ہونے كي اہميت كا حوالہ ديتے ہوئے انہوں نے كہا ہے كہ يہ معاہدہ بين الاقوامي سطح پر امن اور امان كي ضمانت ديتا ہے جس كي وجہ سے يورپي ممالك اس كو بہت اہميت ديتے ہيں.

انہوں نے كہا كہ اس معاہدے كے نفاذ كے بعد مشرقي وسطي ميں دہشت گردي كے خلاف جنگ ميں اہم پيشرفت ہوئي ہے.

*1*271**