امریکی اقدامات کا جواب عملی میدان میں دیں گے: ایرانی کمانڈر

تہران - ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کی مسلح افواج کے ترجمان نے گزشتہ دنوں میں امریکہ کے مختلف فوجی اور سیاسی اہلکاروں کی ایران کے خلاف اقدامات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی اقدامات کا جواب میدان عمل میں دیں گے.

بريگيڈيئر جنرل سيد مسعود جزائري نے كہا كہ امريكي وزير دفاع سميت ديگر امريكي سياستدانوں نے اسلامي جمہوريہ نظام كو گرانے كے اپنے بچگانہ خيالات اور خواہشات كے لئے مختلف اقدامات كئے ليكن اس كي ہميں كوئي پروا نہيں ہے.

انہوں نے كہا كہ ايران اپني پوري توجہ خطے ميں دہشت گردوں كو شكست دينے اور اپنے ملكے سے باہر نكالنے كے مركوز كئے ہوئے ہے اور ہميں يقين ہے كہ اللہ كي مدد سے ہم كامياب ہوں گے.

ايراني جنرل نے مزيد كہا كہ امريكہ ايران ميں اسلامي نظام كے خاتمے كے لئے نئے خواب ديكھ رہا ہيں جس كے حوالے سے ہميں كوئي پريشاني لاحق نہيں ہے.

انہوں نے مزيد كہا كہ امريكہ ايران كے خلاف نئي پابنديوں كي تياري كررہا ہے جس كا خميازہ خود امريكي حكومت كو بھگتنا پڑے گا.

انہوں نے كہا كہ ايران ان پابنديوں كے مقابلے كيلئے تيار ہے.

ياد رہے كہ امريكي وزير دفاع جيمز ميٹِس نے اپنے حاليہ بيان ميں يہ دعوي كيا تھا كہ ايران دنيا كي مختلف دہشت گردانہ كاروائيوں ميں ملوث ہے.

انہوں نے ايك بار پھر ايراني انقلاب كے خاتمے پر زور دے كر كہا كہ ايراني اسلامي انقلاب دنيا كي سلامتي كے لئے بڑا خطرہ ہے.

*1*271*