منشیات کے خلاف ایران کی کاروائی انسانیت کی خدمت ہے: ایرانی عہدیدار

تہران - ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک اعلی انسانی حقوق کے عہدیدار نے بتایا کہ منشیات کے خلاف ایران کی کاروائی انسانیت کی خدمت ہے اور ایسے اقدامات ہرگز انسانی حقوق کی خلاف ورزی نہیں ہیں.

يہ بات انساني حقوق اورجوڈيشل تعاون كي اعلي كونسل كے ڈپٹي سيكرٹري جنرل كاظم قريب آبادي نے صحافيوں سے بات چيت كرتے ہوئے كہي.

انہوں نے كہا كہ ايراني سيكورٹي فورسز كي كاروائي ميں برآمد ہونے والي منشيات دنيا كے دوسرے ممالك كي نسبت كئي گنا زيادہ ہيں.

انہوں نے كہا كہ ايران كے پڑوسي ممالك ميں منشيات باقاعدگي سے كاشت ہوتي ہيں جس كي وجہ سے ايران منشيات كي يورپ كي سمگلنگ كے لئے باقاعدگي سے مافيا گروہوں كے ذريعہ استعمال ہوتا ہے.

انہوں نے ايران پرسمگلروں كو سزائے موت دينے كے خلاف بعض يورپي ممالك كي تنقيد كو مسترد كرتے ہوئے كہا كہ اگر ايران منشيات كي سمگلنگ كے خلاف كاروائي ميں ذرا سي كمي لائے تو پورے يورپ ميں بڑي تباہي ہو سكتي ہے.

ايراني عہديدار نے مزيد كہا كہ اسلامي جمہوريہ ايران منشيات كي سمگلنگ كے لئے بہت بڑي قرباني دے رہا ہے جس كے نتيجے ميں سالانہ سيكورٹي فورسز كے 4000 جوان سمگلروں سے مقابلوں كے دوران شہيد ہوئے ہيں.

*1*271**