ایران نے افغانستان میں ایرانی ہیلی کاپٹر کی آمد کی خبروں کو مسترد کردیا

ہرات - ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے افغان طالبان کے زیر قبضے علاقے 'فراہ' میں ایرانی ہیلی کاپٹر کی لینڈنگ کے حوالے سے بعض میڈیا رپورٹس کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسی بے بنیاد خبروں کا مقصد دونوں ممالک کے دوستانہ تعلقات کو متاثر کرنا ہے.

یہ بات افغان صوبے 'ہرات' میں تعینات ایرانی قونصل جنرل 'محمود افخمی رشیدی' نے ہفتہ کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ افغان حکومت یا صوبے فراہ کے کسی بھی حکام نے ایرانی ہیلی کاپٹر کی آمد کی غلط خبروں کی تصدیق نہیں کی اور ایسی خبروں کو ہوا دینے سے دوطرفہ تعلقات متاثر ہوسکتے ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور افغانستان کے درمیان سرحدی اور فضائی سرحدیں امن اور دوستی کی سرحدیں ہیں اور ایسی جھوٹی خبر دونوں ممالک کے عوام موجود مضبوط تعلقات کو متاثر نہیں کرسکتی.

ایرانی قونصلر جنرل نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ہمیشہ افغانستان میں امن و استحکام کی حمایت کی ہے اور ہم سمجھتے ہیں پڑوسی ملک میں عدم استحکام اور بدامنی سے ایران یا کسی اور ملک کو فائدہ نہیں ملے گا.

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور افغانستان کے درمیان مختلف شبعوں میں اچھے تعلقات قائم ہیں اور انھی روابط کو مزید توسیع دینے کے مقصد سے دونوں ممالک کی اعلی قیادت، سنئیر حکام اور سرحدی ملحقہ علاقوں کے عہدیداروں مسلسل رابطے میں ہیں.

٢٧٤**