ایران کیساتھ تعلقات ہماری پہلی ترجیح ہے: سابق پاکستانی وزیراعظم

لاہور - ارنا - پاکستان کے سابق وزیراعظم اور پیپلز پارٹی کے سنئیر رہنما 'راجہ پرویز اشرف' نے پاک،ایران دوستانہ اور قریبی تعلقات کی اہمیت کا حوالہ دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ دوستانہ تعلقات کی توسیع پاکستان کی پہلی ترجیح ہے.

یہ بات 'راجہ پرویز اشرف ' نے ہفتہ کے روز پاکستانی شہر 'لاہور' میں تعینات ایران کے قونصلر جنرل 'محمد حسین بنی اسدی' کے ساتھ الوداعی ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر فریقین نے پاک،ایران تعلقات پر تبادلہ خیال کیا جبکہ راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پاکستان، تمام ممالک بشمول ایران کے ساتھ دوستانہ تعلقات کا خواہاں ہے.

سابق پاکستانی وزیراعظم نے کہا کہ پاکستانی قوم ہرگز نہیں بھول سکتی کہ ایران پہلا ملک تھا جس نے 1947 میں پاکستان کی آزادی کو تسلیم کیا اور مشکل گھڑی میں ہمیشہ پاکستان کا شانہ بہ شانہ کھڑا رہا ہے.

انہوں نے کہا کہ ان کے ایرانی قونصلٹ جنرل کے دورے کا مقصد برادر اور ہمسایہ ملک ایران کے ساتھ دوستی کا اعادہ اور دوطرفہ تعلقات کو مزید بڑھانے پر اپنی خواہش کا اظہار کرنا تھا.

اس ملاقات کے بعد سابق پاکستانی وزیراعظم نے ایک پریس کانفرنس میں میڈیا کے ساتھ پاک،ایران تعلقات کی اہمیت اور دوطرفہ تعاون بڑھانے کے حوالے سے اپنے خیالات کا اظہار بھی کیا.

٢٧٤**