ایران کی جوہری ھتھیاروں کی روک تھام معاہدے کی بھرپور حمایت

نیو یارک - ارنا - عالمی جوہری ادارے میں تعینات ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ ایرانی عوام مہلک ھتھیاروں کے شکار رہے ہیں اس لئے ہم جوہری ھتھیاروں کی روک تھام کے معاہدے (NPT) کی بھرپور حمایت کا اعلان کرتے ہیں.

تفصیلات کے مطابق، جوہری ھتھیاروں کے مخالف ممالک کی گزشتہ جمعہ کے روز اقوام متحدہ میں اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس کے اختتام پر جوہری ھتھیاروں کو بنانے، نقل و حرکت اور اس کے استعمال کو روکنے کے حوالے سے مشترکہ بیان جاری کردیا.

بین الاقوامی جوہری توانائی ادارے میں متعین ایرانی سفیر 'رضا نجفی' کی قیادت میں اسلامی جمہوریہ ایران کے وفد نے اس اجلاس میں شرکت کی اور جوہری ھتھیاروں کی روک تھام کے حوالے سے بین الاقوامی کوششوں کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا.

اس اجلاس کے اختتام پر خطاب کرتے ہوئے ایرانی سفیر نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران دنیا میں جوہری ھتھیاروں پر مکمل پابندی کی بھرپور حمایت کرتا ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران خود مہلک ھتھیاروں کا شکار رہا ہے جبکہ قائد اسلامی انقلاب حضرت آیت اللہ خامنہ ای کے تاریخی فتورے کے مطابق مہلک ھتھیاروں کا استعمال حرام ہے اور ہم حالیہ اجلاس کی جانب سے جوہری ھتھیاروں کے خاتمے کے لئے مذہبی رہنماؤں کے کردار کا ذکر کرنے پر شکیہ ادا کرتے ہیں.

ایرانی سفیر نے مزید کہا کہ ناجائز صہیونی ریاست کے پاس خطرناک مہلک ھتھیاروں سے مشرق وسطی کو شدید خطرات لاحق ہے.

انہوں نے کہا کہ مشرق وسطی کو ایسے مہلک ھتھیاروں سے پاک کرنے کی ایرانی پیشکش خطے میں ایسے خطرات سے نمٹنے کے لئے ایرانی عزم اور کوششوں کی واضح علامت ہے.

٢٧٤**