پاکستان ایران،سعودیہ کے حوالے سے متوازن تعلقات رکھنے کا خواہاں

اسلام آباد - ارنا - پاکستان نے اپنے ایران اور سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کو اہم اور اسٹریٹجک قرار دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ وہ تہران اور ریاض کے حوالے سے متوازن تعلقات رکھنے کا خواہاں ہے.

یہ بات پاکستان کے مشیر قومی سلامتی لیفٹیننٹ جنرل (ر) 'ناصر خان جنجوعہ' نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور سعودی عرب دونوں ہمارے اسلامی اور برادر ملک ہیں اور ہم دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کا خاتمہ چاہتے ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان تمام اقوام اور اسلامی ریاستوں کی وحدت اور یکجہتی کا خواہاں ہے اور آپس میں وحدت کو وقت کی ضرورت سمجھتے ہیں.

پاکستانی مشیر قومی سلامتی نے بتایا کہ اختلافات اور کشیدگی امت مسلمہ کے لئے ناسور ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران اور پاکستان باہمی تعاون کے ذریعے عالم اسلام کے درمیان وحدت، ہم آہنگی اور یکجہتی کو مضبوط کرنے کے لئے اپنے کردار ادا کرنا چاہئے.

یاد رہے کہ پاکستان نے کئی بار اسلامی جمہوریہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان ثالثی کا کردار ادا کرنے کی تجویز دی تھی اور بقول پاکستانی حکام وہ یقین رکتھے ہیں کہ پاکستان اپنی اعلی صلاحیتوں کی وجہ سے موجودہ تنازعات اور اختلافات کا خاتمہ کرسکتا ہے.

تفصیلات کے مطابق 2015 کو پاکستانی وزیر اعظم 'نواز شریف' اور اس وقت کے آرمی چیف جنرل (ر) 'راحیل شریف' نے ایران اور سعودی عرب کے درمیان اختلافات کو ختم کرنے کے لئے تہران اور ریاض کا دورہ کیا جس کا اسلامی جمہوریہ ایران نے خیرمقدم کیا مگر سعودی عرب نے اس عمل کو سنجیدگی سے نہیں لیا.

٢٧٤**