شام امن مذاکرات کے موقع پر ایران اور فرانس کے اعلی سفارتکاروں کی ملاقات

تہران - ارنا - آستانہ میں منعقدہ شام امن مذاکرات کے پانچویں دور کے موقع پر ایرانی وفد کے سربراہ اور فرانسیسی ایلچی برائے امور شام نے ایک ملاقات کے دوران شام کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

تفصیلات کے مطابق، نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے عرب اور افریقی امور 'حسین جابری انصاری' نے گزشتہ روز شام امن مذاکرات کے موقع فرانس کے خصوصی نمائندہ 'فرینک جیلی' کے ساتھ ملاقات کی.

اس ملاقات میں فریقین نے شامی بحران کا سیاسی حل، غیرریاستی عناصر کی سرگرمیوں کی مخالفت شام میں انسانی بحران پر قابو پانے کی ضرورت پر زور دیا.

فرانسیسی ایلچی نے اس ملاقات میں شامی بحران کے حوالے سے فرانس حکومت کے مؤقف پر روشنی ڈالی اور اس حوالے سے ان کو ایرانی مؤقف سے بھی آگاہ کیا گیا.

واضح رہے کہ منگل کے روز آستانہ عمل سے منسلک شام امن مذاکرات کے پانچویں دور کا آغاز کردیا گیا اور اس موقع پر شام کے مخصوص علاقوں میں امن کے قیام کے حوالے سے تفصیلی گفتگو ہوئی.

اس دو روزہ مذاکرات میں فریقین شام میں انفراسٹیکچر کی از سرنو تعمیر اور اس حوالے سے بین الاقوامی انسانی بنیاد پر امداد کی فراہمی پر بھی تبادلہ خیال کیا.

اس نشست میں آستانہ عمل کے بانی ممالک اسلامی جمہوریہ ایران، روس اور ترکی کے علاوہ شامی حکومت اور مخالف گروپوں کے نمائندے اور امریکہ کا مبصرہ نمایندہ بھی شریک تھے.

اقوام متحدہ کے ایلچی برائے امور شام اسٹافن ڈی مستورا نے بھی شام امن مذاکرات میں شرکت کی.

روسی ٹی وی چینل رشیا ٹو ڈے کے مطابق، فریقین کے درمیان شام کے بحران کے خاتمے کے لئے قومی مصالحتی کمیٹی کی تشکیل پر اتفاق طے پاگیا ہے.

9410*274**