ایران کا چین کے ساتھ سرحدپار الکٹرانک تجارت کے فروغ پر غور

تہران - ارنا - ایران کے قومی پوسٹ آفس کے سربراہ نے پوسٹ سے متعلق چین کے ساتھ تعاون بڑھانے کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم چین کے ساتھ سرحدپار الکٹرانک تجارت کو مزید فروغ دینے پر غور کر رہے ہیں.

یہ بات 'حسین مہری' نے بدھ کے روز تہران میں ایران اور چین کے پوسٹ محکموں کے درمیان تعاون کے معاہدے پر دستخط کرنے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ ایران اور چین کے درمیان سرحد پار الکٹرانک تجارت کو فروغ ملنے سے دونوں ممالک کے تعلقات کو مزید مضبوط کرنے میں مدد ملے گی.

ایران کے مواصلات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے نائب وزیر نے آئندہ میں آذربائیجان، عراق، ترکی اور آرمینیا ممالک کے ساتھ سرحد پار تجارت کے معاہدے پر دستخط کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ چین کے ساتھ سرحد پار ای کامرس کے قیام کے لیے ضروری اقدامات انجام ہو رہا ہے.

مہری نے شاہراہ ریشم کی بحالی میں چین کی کوششوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایران دونوں ممالک کے مابین اقتصادی اور پوسٹ کے شعبوں میں باہمی تعاون کو مزید بڑھانے کا خیر مقدم کر رہا ہے.

ایران پوسٹ کمپنی کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ ایرانی موجودہ حکومت نے پوسٹ کے شعبے میں نمایان کامیابیان حاصل کی ہے.

انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ ایران اور چین کے درمیان پوسٹ کے شعبے میں معاہدے پر دستخط کرنے سے دونوں ممالک کے تعلقات کو مزید فروغ دینے میں مدد ملے گی.

یاد رہے کہ آج کی صبح ایران اور چین کی پوسٹ کمپنی کے ڈائریکٹر جنرلوں 'حسین مهری' اور 'جون شنگ' نے ایک پوسٹ معاہدے پر دستخط کئے.

9410*274**