ایرانی زائرین کو حج پر بھیجنا ریاست کی پالیسی ہے: ایرانی وزیر ثقافت

تہران - ارنا - ایران کے وزیر ثقافت اور اسلامی گائیڈنس نے سعودی عرب کی جانب سے ایرانی عازمین حج کی سیکورٹی اور عزت کو یقینی بنانے کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ریاست کی پالیسی ایرانی زائرین کو حج کے لئے سعودی عرب بھیجنے پر مبنی ہے.

'سید رضا صالحی امیری' نے بدھ کے روز تہران میں کابینہ کے اجلاس کے بعد صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے حج کے حوالے سے تازہ ترین صورتحال پر روشنی ڈالی.

انہوں نے اس موقع پر مزید کہا کہ ریاست نے فیصلہ کیا ہے کہ ضروری اقدامات کے ساتھ ایرانی زائرین کو اس سال حج پر بھیجا جائے.

انہوں نے مزید کہا کہ حج کے حوالے سے ریاست کی پالیسی زائرین کی سیکورٹی اور ان کی عزت کو یقینی بنانے پر مبنی ہے اور انھی شرائط کو ایران کی جانب سے سعودی حکام کے سامنے رکھا گیا اور سعودی عرب نے بھی شرائط پوری کرنے پر یقین دہانی کرائی.

انہوں نے بتایا کہ ایرانی حجاج کی سیکورٹی ریاست کی اعلی قیادت کی اہم ترجیح ہے.

ایرانی وزیر ثقافت نے بتایا کہ حج کے حوالے سے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جارہے ہیں اور 31 جولائی کو ایرانی زائرین کا پہلے گروپ سعودی عرب بھیجا جائے گا.

یاد رہے کہ ایرانی وفد نے سعودی وزیر حج کے ساتھ ہونے والے مذاکرات میں واضح طور پر اپنے مطالبات پیش کئے اور ان مذاکرات کے اختتام پر حتمی مفاہمت طے پاگئی جس کے نتیجے میں اس سال 86 ہزار ایرانی شہری حج کے عظیم فریضے کا شرف حاصل کریں گے.

ایرانی حکام نے بتایا ہے کہ کہ سعودی عرب کے ساتھ ایرانی زائرین کو سیکورٹی کی مکمل فراہمی، طبی سہولیات، قونصلر خدمات تک رسائی اور دیگر موضوعات پر تفصیلی بات چیت کی گئی اور سعودی حکام نے ہمارے مطالبات مان لیے.

٢٧٤**