آستانہ امن عمل: نائب ایرانی وزیرخارجہ کی ایلچی اقوام متحدہ برائے امور شام سے ملاقات

ماسکو - ارنا - قازقستان کے دارالحکومت آستانہ میں شام امن عمل کے پانچویں دور کے موقع پر نائب ایرانی وزیرخارجہ برائے عرب اور افریقی امور نے اقوام متحدہ کے ایلچی برائے امور شام 'اسٹافن ڈی مستورا' کے ایک ملاقات میں شام کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

فریقین نے اس موقع پر جنیوا امن عمل، آستانہ مذاکرات، شام میں پائیدار جنگ بندی کے نفاذ، شامی فریقین کے درمیان مذاکرات کی بحالی اور شام میں تشدد روکنے کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی.

انہوں نے شامی بحران کے حل کے لئے آستانہ اور جنیوا مذاکرات کو آگے لے جانے پر اتفاق کیا.

اقوامی متحدہ کے خصوصی ایلچی نے آستانہ میں ہونے والے شام امن مذاکرت کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ ان مذاکرات کی کامیابی کے لئے اپنی حمایت جاری رکھے گی.

نائب ایرانی نائب وزیر خارجہ نے بھی اس ملاقات شامی پناہ گزینوں کی مشکلات کے خاتمے پر زور دیا اور کہا کہ عالمی برادری شامی پناہ گزینوں کی بحالی کے لئے ہر ممکن مدد فراہم کرے.

تفصیلات کے مطابق آستانہ میں شام امن مذاکرت کے پانچویں دور کا آغاز ہوگیا ہے جس میں ایران، روس، ترکی سمیت شامی حکومت اور باغی گروہوں کے نمائندے شریک ہیں.

اجلاس میں شام میں جنگ بندی اور امن علاقوں پر نو فلائی زون پر عملدرآمد کے حوالے سے بات چیت ہوگی.

آستانہ مذاکرات کا عمل روس، ترکی اور اسلامی جمہوریہ ایران کی کوششوں سے شروع ہوا جس میں امریکا بھی بطور مبصر شریک ہے.

دوسری طرف روسی ذرا‏ئع ابلاغ کا کہنا ہے کہ اس دور میں قیدیوں کی آزادی کے حوالے سے بھی بات چیت ہوگی.

١*٢٧٤**