ایران مزاحمتی تحریک کا بنیادی ستون ہے: لبنانی میڈیا کے عہدیدار

مشہد - ارنا - لبنان کے فلم بنانے اور نشر کرنے والے بین الاقوامی مرکز کے ڈائریکٹر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران مزاحمتی فرنٹ کا بنیادی ستون ہے اور اس ملک کی سنجیدہ کوششوں کی وجہ سے مسئلہ فلسطین فراموش نہیں ہو سکتا ہے.

يہ بات 'يوسف وہبي' نے پير كے روز ايران كے مذہبي شہر مشہد ميں منقعدہ اسلامي ممالك كے ريڈيو اور ٹي وي كے 9ويں اجلاس كے موقع پر ارنا كے نمائندے كے ساتھ گفتگو كرتے ہوئے كہي.

اس موقع پر انہوں نے كہا كہ مغرب كي جانب سے حمايت يافتہ ممالك اپنے عوام كي پشت پناہي كے بغير ناجائز صہيوني رياست كے ساتھ دوستانہ تعلقات قائم كئے ہوئے ہيں.

انہوں نے كہا كہ سعودي اور عرب حكام نے طويل عرصے سے اب تك ناجائز صہيوني رياست كے ساتھ خفيہ طور پر دوطرفہ تعلقات قائم كئے ہيں مگر ابھي صورتحال ميں اپني ناكامي كي وجہ سے واضح طور پر اپنے تعلقات كو جاري ركھے ہوئے ہيں.

انہوں نے كہا كہ ناجائز صہيوني رياست سے مقابلہ كرنا اسلامي ممالك اور ميڈيا كا مشتركہ مقصد ہے اسي لئے اسلامي آزاد ميڈيا اپنے معلومات اور عوامي بيداري كے ذريعہ بہت سے لوگوں كو مزاحمتي فرنٹ ميں شامل ہونے كا باعث بن سكتے ہيں.

لبناني ميڈيا كے سرگرم كاركن نے اس بات پر زور ديا كہ جبكہ امريكہ اور ناجائز صہيوني رياست مسلمانوں كے درميان تفرقہ ڈالنا چاہتے ہيں تنازعات كو دور كرنا ناگزير ہے.

تفصيلات كے مطابق، اسلامي ممالك كے ريڈيو اور ٹي وي كا 9ويں اجلاس اتوار سے منگل كے روز تك اسلامي جمہوريہ ايران كے صوبے خراسان رضوي كے شہر مشہد مقدس ميں منعقد كيا گيا ہے جس ميں 600 ملكي اور غيرملكي مہمان اور 36 ممالك كے 230 چينل كے نمائندے بھي شركت كر رہے ہيں.

*9393*274**