ٹرمپ کے آرڈر کے بعد ایران میں عالمی کُشتی مقابلوں میں امریکی ٹیم کی شرکت مشکوک

تہران - ارنا - امریکی صدر ڈانلڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران سمیت 7 اسلامی ملکوں کے لئے امریکہ کو نوگو ایریان قرار دینے کے حکم کے بعد اب ایران میں رواں مہینے منعقد ہونے والے عالمی کشتی مقابلوں میں امریکی ٹیم کی شرکت کے حوالے سے چہ میگوئیاں شروع ہوگئی ہیں.

امريكہ كي فري اسٹائل كشتي ٹيم نے 16 اور 17 فروري سے ايران كے مغربي صوبے كرمانشاہ ميں منعقد ہونے والے بين الاقوامي 2017 كشتي مقابلوں ميں شركت كرني ہے.



ايران كي ريسلنگ فيڈريشن كے سيكرٹري نے پير كے روز اس حوالے سے بتايا كہ ايك خصوصي كميٹي امريكي پہلوانوں كے لئے ايراني ويزے جاري كرنے كے حوالے سے فيصلے كرے گي جس كا ہم انتظار كر رہے ہيں.



نئے امريكي صدر ڈانلڈ ٹرمپ نے گزشتہ دنوں ايك صدارتي حكم كے تحت 7 اسلامي ممالك كے شہريوں كو امريكہ ميں داخلے پر پابندي لگادي. اس اقدام كے رد عمل ميں اسلامي جمہوريہ ايران نے بھي ايران كا سفر كرنے والے امريكہ شہريوں كے حوالے سے ايك كميٹي تشكيل دي.



تفصيلات كے مطابق، ايران ميں منعقد ہونے والي عالمي كشتي مقابلوں كے لئے صرف 17 روز باقي رہ گئے ہيں تاہم ايران كي ريسلنگ فيڈريشن كے سيكرٹري 'رضا لايق' كا كہنا ہے كہ دفترخارجہ كي خصوصي كميٹي اس معاملے كا جائزہ لے رہي ہے اور ہميں حتمي نتائج كا انتظار كرنا ہوگا.



انہوں نے كہا كہ اگر كميٹي نے امريكي شہريوں كے ايران ميں داخلے پر پابندي لگادي تو ہم ورلڈ ريسلنگ فيڈريشن سے امريكہ كي جگہ پر كسي اور ملك كا انتخاب كرنے كے لئے رابطہ كريں گے.



انہوں نے مزيد بتايا كہ خصوصي كميٹي كے تمام فيصلے ايراني قوم اور ملك كے مفادات كے مطابق ہوں گے اور ہم بھي وطن عزيز كي پاليسيوں سے اتفاق كرتے ہيں.



تفصيلات كے مطابق، 45ويں بين الاقوامي فري اسٹائل كشتي مقابلوں كا ايراني صوبے كرمانشاہ ميں منعقد كرنا ہے جس ميں پروگرام كے مطابق اسلامي جمہوريہ ايران، روس، تركي، امريكہ، جارجيا، جمہوريہ آذربائيجان، بھارت اور منگوليا كي ٹيم شركت كريں گي.



٢٧٤**