دہشتگردی کیخلاف جنگ جاری/امریکہ کو جوابی رد عمل دیں گے: نائب ایرانی صدر

تہران - ارنا - سنئیر نائب ایرانی صدر نے کہا ہے کہ ایرانی حکومت دنیا کے ہر کونے میں موجود اپنے شہریوں کی حمایت کرے گی اور ہم امریکی حکومت کی جانب سے ویزوں پر پابندی لگانے پر جوابی رد عمل دیں گے اور اس حوالے سے امریکی شہریوں کے ساتھ بھی ویسا ہی برتاؤ کیا جائے گا.

ان خيالات كا اظہار 'اسحاق جہانگيري' نے پير كے روز تہران ميں ايك مقامي تقريب كے موقع پر امريكہ كے حاليہ نسل پرستي اقدامات پر اپنے رد عمل كا اظہار كرتے ہوئے كيا.



انہوں نے كہا كہ امريكي حكومت كي جانب سے ويزوں پر پابندي لگانے كے خلاف ايراني دفترخارجہ نے سركاري رد عمل كا اظہار كيا.



انہوں نے مزيد بتايا كہ ہم امريكہ كو جوابي رد عمل ديں گے اور اس كے تحت جو بھي امريكي شہري ايراني ويزے كي درخواست دے گا تو ہم بھي اس كے ساتھ ويسا ہے برتاؤ كريں گے.



انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ حكومت دنيا كے كسي بھي كونے ميں موجود ايراني شہريوں كي حمايت كرے گي اور اس حوالے سے تمام وسائل كا استعمال كيا جائے گا.



نائب ايراني صدر نے كہا كہ ايران خود دہشت گردي كا شكار رہ چكا ہے، انقلاب كے بعد اس ملك كي قوم كو شديد نقصان پہنچا مگر پھر بھي ہم نے دہشتگردوں كے خلاف سيسہ پلائي ديوار بن كے كھڑے رہے.



انہوں نے بتايا كہ ايراني قوم نے ان دہشتگردوں كے خلاف كھڑي رہي جنہوں نے امريكہ اور بعض علاقائي ممالك كي پشت پناہي كے ساتھ عراق، ليبيا، شام اور يمن كي صورتحال كو بگاڑ ديا.



اسحاق جہانگيري نے اس بات پر زور ديا كہ دہشتگردي كے خلاف ہماري جد و جہد جاري رہے گي اور دنيا كے ہر كونے ميں ايراني قوم كے حقوق كا دفاع كرتے رہيں گے.



۲۷۴**