خاتون ایرانی رکن پارلیمنٹ نے نیویارک خواتین کانفرنس کا بائیکاٹ کردیا

تہران - ارنا - ایرانی مجلس (پارلیمنٹ) کی خاتون رکن نے کہا ہے کہ انہوں نے نئے امريکي صدر کے نسل پرست ويزا اقدامات کي وجہ سے امريکہ ميں منعقد ہونے والي مقام خواتین نامی عالمی کانفرنس میں شرکت کا بائيکاٹ کردیا ہے.

يہ بات ايران كے صوبے مشرقي آذربايجان سے ركن مجلس 'زہرا ساعي' نے پير كے روز ارنا كے نمائندے كے ساتھ گفتگو كرتے ہوئے كہي.



انہوں نے مزيد بتايا كہ امريكي صدر ڈانلڈ ٹرمپ كے حاليہ نسل پرستي پر مبني اقدامات تمام اسلامي ممالك سميت اسلامي جمہوريہ ايران كي توہين ہے.



انہوں نے مزيد بتايا كہ وہ اس متعصابہ اقدام كے احتجاج ميں نيويارك ميں منعقد ہونے والي خواتين كانفرنس ميں شركت نہيں كريں گي.



ساعي نے كہا كہ امريكہ صدر كا دعوي ہے كہ ان كے حاليہ اقدامات سے دہشت گردوں پر قابو اور امريكي عوام كي سيكورٹي كے لئے صحيح فيصلہ ہے مگر ايسے اقدامات كے نتيجے ميں انتہا پسندي اور دہشت گردي كو مزيد ہوا ملے گي.



٩٣٩٣*٢٧٤**