شمالی بحر ہند میں عنقریب ایرانی بحری مشقوں کا آغاز ہو گا

مشہد - ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کی بحریہ کے سربراہ نے کہا ہے کہ عنقریب ایران کی سب سے بڑی بحری مشقیں بحر ہند کے شمال میں منعقد ہوں گی.

ايراني بحريہ كے كمانڈر رئير ايڈميرل حبيب اللہ سياري نے مشہد مقدس ميں بحريہ شہداء كي كانفرنس كے موقع پر صحافيوں سے بات چيت كرتے ہوئے كہا كہ ايراني بحريہ نے دفاعي مشقوں پر خصوصي طور پر توجہ دي ہے اور بين الاقوامي سمندري حدود ميں مشقوں كا انعقاد بھي اسي پاليسي كا تسلسل ہے.



انہوں نے كہا كہ يہ مشقيں آئندہ ماہ ميں بين الاقوامي سمندري حدود ميں خليج عدن اور آبنائے باب المندب كے قريب كي جائيں گي.



انہوں نے كہ اسلامي جمہوريہ ايران كے بحري جہازوں نے گزشتہ سالوں ميں اس راستے پر ملكي اور غير ملكي 4 ہزار سے زائد تجارتي كشتيوں كو بحري قزاقوں كے خطرات سے بچاتے ہوئے انہيں محفوظ راستہ فراہم كرنے ميں اہم كردار ادا كياہے.



انہوں نے كہا كہ ايراني بحريہ نے دوسرے ممالك كے تعاون سے تجارتي سامان لے جانے والي بڑي بحري كشتيوں كي حفاطت اور سمندي امن اور سلامتي كو يقيني بنانے كے لئے متعدد مشتركہ مشقيں كي ہيں.



انہوں نے كہا كہ ايراني بحري بيڑے نے بين الاقوامي سمندري حدود ميں بحر ہند اور جنوب مشرقي ايشيا سے منسلك ممالك تك سفر كيا ہے آئندہ قريب ميں پيسيفيك اور بحر الكاہل تك سفر كرے گا.



ايراني بحريہ كے سربراہ نے مزيد كہا كہ بحريہ كي كاوشوں ميں توسيع صرف سمندري سلامتي سے حاصل ہوتي ہے اس لئے اسلامي جمہوريہ ايران خطے ميں بحري سلامتي كو يقيني بنانے كے لئے انتھك كوششيں كر رہا ہے.



271**