آستانہ شامی امن مذاکرات کامیاب رہے : روسی صدر

ماسکو - ارنا - روسی صدر ویلادیمیر پوٹن نے قازقستان کے درالحکومت آستانہ میں شامی امن مذاکرات کو کامیاب قرار دیا ہے.

روسي صدر نے قازقستان كے صدر نورسلطان نظربايف سے فون پر گفتگو كے دوران قازق صدر سے ان كي كوششوں كا خيرمقدم كيا.



كريملن محل كے كے ويب سايٹ كے مطابق ويلاديمير پوٹن نے ‌كہاہے كہ قازقستان حكومت نے اس كامياب نشست ميں اہم كردار ادا كياہے.



دونوں صدور نے اس بات كا اعتراف كيا كہ آستانہ كي امن نشست نے شام ميں امن اور استحكام كے نفاذ كے لئے بين الاقوامي برادري كي كوششوں كو ايك نئي جدت دي ہے.



قازقستان مں منعقدہ دو روزہ شام امن مذاكرات گزشتہ منگل كے روز اختتام پذير ہو گئے جس ميں فريقين نے نے مشتركہ اعلاميے ميں ايران،روس،تركي سہ فريقي تعاون اور شامي بحران كو ساحسي طور پر حل كرنے كي عالمي حمايت جاري ركهنے پر اتفاق كيا.



اس مشتركہ اعلاميے ميں كہا گيا ہے كہ اسلامي جمہوريہ ايران،روس اور تركي كي جانب سے شامي حكومت اور مخالف گروہوں كے درميان ہونے والے شام امن مذاكرات كي بهرپور حمايت جاري رہے گي اور تينوں ممالك شام كے مسئلے كو پُرامن سياسي ذريعے سے حل كرنے كي كوششيں جاري ركھني ہوں گي.



*9393*271**