پابندیوں کےخاتمے کے بعد ایران کی تیل برآمدات تاریخی سطح پر پہنچ گئیں: اطالوی اخبار

روم - ارنا - اٹلی کے ایک اقتصادی اخبار کے مطابق، عالمی پابندیوں کے خاتمے کے بعد ایرانی تیل کی اٹلی سمیت مختلف یورپی ممالک برآمدات میں قابل قدر اضافہ ہوا ہے۔

اطالوي اخبار 'ال سلے' كي رپورٹ كے مطابق، اسلامي جمہوريہ ايران نے يورپي ممالك كو تيل برآمدات ميں تاريخي ريكارڈ قائم كرديا ہے اور اس وقت يورپ پابنديوں سے پہلے كي طرح ايراني تيل درآمد كر رہا ہے.



اس رپورٹ ميں تہران حكومت كے اعداد و شمار كا حوالہ ديتے ہوئے مزيد كہا گيا ہے كہ گزشتہ دسمبر ميں ايران نے يوميہ 767000 بيرل تيل يورپ كو برآمد كيا ہے اور تيل خريدنے والے يورپي ممالك كي فہرست ميں تركي اور اٹلي سب سے آگے ہيں.



سپين اور يونان جو ايراني تيل كے پرانے گاہك ہيں نے بھي روزانہ 97 ہزار بيرل تيل ايران سے خريدا ہے.



اطالوي اخبار نے مزيد كہا كہ ايران مخالف پابنديوں كے خاتمے كے بعد پہلي بار ايران كے تيل بردار جہازوں نے يورپ كي بندرگاہوں تك رسائي حاصل كي.



تفصيلات كے مطابق، ا ايران كي قومي تيل كمپني كے دو بڑے تيل برداري سمندري جہاز 'Huge' و ' Snow' ہيں آئندہ دنوں تك نيدرلينڈ بندرگاہ كي پہنچ جائيں گے. يہ ايراني سمندري جہاز 20 لاكج بيرل تيل لے جانے كي گنجائش ركھتے ہيں.



اطالوي اخبار نے انشورنس مسئلے كو ايراني تيل كي يورپ برآمدات كے لئے ايك اہم مشكل قرار ديتے ہوئے مزيد كہا كہ تيل جہازوں كي كھيپ كي ڈبل انشورنس كو يقيني بنانے كي ضرورت ہے.



٢٧٤**