اسلام کو جاننے کیلئے مسلم اور غیرمسلم نوجوان بے تاب ہیں: رکن ایرانی پارلیمنٹ

تہران - ارنا - ایران،مالی پارلیمانی فرینڈشیپ گروپ کے سربراہ نے کہا ہے کہ عالم اسلام بالخصوص مسلم اور غیرمسلم نوجوان اسلام کو جاننے کے لئے بے تاب ہیں اور اس حوالے سے اسلام کا حقیقی پیغام پہنچانا ہمارا اصل فرض ہے.

يہ بات ركن ايراني پارليمنٹ 'كاظم جلالي' نے مغربي افريقہ ميں واقع جمہوريہ مالي كے دورے كے موقع پر مالي كي مسلمان تنظيم كے سنئير رہنما 'شريف عثمان حيدرہ' كے ساتھ ملاقات ميں گفتگو كرتے ہوئے كہي.



اس ملاقات ميں ايراني پارليماني وفد ميں شامل عبدالرضا عزيزي اور سيد مصطفي ذوالقدر سميت جمہوريہ مالي ميں واقع ايراني سفارتخانے كے ناظم الامور رضائي بھي شريك تھے.



اس موقع پر ايران،مالي پارليماني فرينڈشيپ گروپ كے سربراہ كاظم جلالي نے كہا كہ تمام اسلامي ممالك كو عالم اسلام كے مسائل كے حل بالخصوص دين اسلام كے پُرامن چہرے كو اُجاگر كرنے كے لئے باہمي تعاون كو فروغ دينا ہوگا.



انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ آج دنيا ميں امن، بھائي چارے اور باہمي احترام پر مبني دين اسلام كو متعارف كرانا ہم سب كا مشتركہ فرض ہے.



اسلامي ممالك ميں بڑھتي ہوئي تكفيري اور انتہاپسندانہ سوچ كا ذكر كرتے ہوئے علام اسلام سے مطالبہ كيا كہ تكفيريت اور دہشتگردي كي سوچ كو جڑ سے اكھاڑنے كے لئے ايك مشتركہ لائحہ عمل بنايا جائے اور اس حوالے سے علمائے اسلام كے باہمي تعاون ناگزير ہے.



كاظم جلالي نے انتہاپسندي كي سوچ كو عالم اسلام و دنيا كے لئے بڑہ خطرہ قرار ديتے ہوئے مزيد بتايا كہ بعض عناصر اسلام كے پُرامن چہرے كو دہشتگردي كے ذريعے متاثر كرنے كي سازشيں كر رہے ہيں.



اس ملاقات ميں جمہوريہ مالي كي مسلم برادري كے سنئير رہنما شيخ عثمان نے بتايا كہ اسلامي جمہوريہ ايران ہمارا برادر ملك ہے كيونكہ دونوں كے درميان اسلام اور مذہب مشتركات ہيں.



انہوں نے كہا كہ ايران، اھل بيت عليھم السلام پر عقيدت اور ان كا احترام كرتے ہيں اور ہميں بھي اس احترام كو اُجاگر كرنا ہوگا. در حقيقت جو بھي مسلمان نبي كريم حضرت محمد صلي اللہ عليہ و آلہ وسلم كو مانتا ہے اسے اہل بيت عليھم السلام سے بھي دوستي و محبت ركھني چاہئے.



ايران اور مالي كے درميان مختلف شعبوں بالخصوص مذہبي شعبے ميں دوطرفہ تعاون كو بڑھانے پر زور ديتے ہوئے شيخ عثمان نے مزيد بتايا كہ ان كے ملك ميں تكفيريت اور انتہاپسندي كے خلاف بھرپور مقابلہ كيا جاتا ہے.



۲۷۴**